Thursday , August 17 2017
Home / دنیا / ماحولیاتی تبدیلی پر معاہدہ کا مسودہ تمام ممالک کو پیش کردیا گیا

ماحولیاتی تبدیلی پر معاہدہ کا مسودہ تمام ممالک کو پیش کردیا گیا

مختلف امور پر متعلقہ وزرا کا باریک بینی سے غور ۔ ہندوستان منصفانہ نتیجہ کے تعلق سے پرامید
لی بورگیٹ ( فرانس ) 5 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) گرین ہاوز گیسوں کے اخراج کو کم روکتے ہوئے عالمی حدت کو کم کرنے کیلئے ایک معاہدہ کے مسودہ کو 195 ممالک کے مصالحت کاروں کے سامنے پیش کیا گیا جبکہ ہندوستان نے اس امید کا اظہار کیا کہ ماحولیاتی کانفرنس کا کوئی منصفانہ اور مساوی حل دریافت ہوگا ۔ 48 صفحات پر مشتمل اس مسودہ میں اہم ترین مسائل کے تمام حل طلب امور کو بھی شامل کیا گیا ہے اور اسی مسودہ کی بنیاد پر ساری دنیا کے مختلف ممالک سے تعلق رھنے والے وزرا تبادلہ خیال کرینگے ۔ اجلاس میں ہندوستان کے وزْر ماحولیات پرکاش جاوڈیکر بھی شریک ہیں۔ یہ وزرا ایک ایسا معاہدہ تیار کرنے کی کوشش کرینگے جس سے تمام ممالک کو اتفاق ہوسکے ۔ تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ پیرس میں اگر کوئی معاہدہ ہوتا بھی ہے تو وہ عالمی حدت کو کم کرنے کے معاملہ میں پورا نہیں ہو پائیگا ۔ تاہم کچھ پیشرفت اب تک ضرور ہوسکی ہے ۔ کہا گیا ہے کہ عالمی حدت کے مسئلہ پر مستقبل میں مذاکرات میں رکاوٹوں کو دور کرنے کیلئے ہنز کئی اقدامات کی ضرورت ہے ۔ اس مسودہ معاہدہ پر سطر بہ سطر تمام ممالک کے وزرا غور کرینگے اور تبادلہ خیال کیا جائیگا ۔ اس کے بعد ہی کسی معاہدہ پر پہونچنے کی امید ظاہر کی جا رہی ہے ۔ ڈائرکٹر گلوبل کلائمٹ پروگرام جینیفر مورگن نے کہا کہ مصالحت کاروں نے ایک نئے مسودہ معاہدہ پر اتفاق کیا ہے جس میں واضح طور پر مختلف امور کی صراحت کی گئی ہو۔ ہندوستان نے بھی تعمیری انداز کے ساتھ اس کانفرنس میں اپنی شرکت کو یقینی بنایا ہے اور وہ چاہتا ہے کہ ماحولیاتی تغیر سے متعلق مذاکرات کا جو کوئی بھی نتیجہ برآمد ہو وہ منصفانہ اور سب کیلئے یکساں ہو۔

TOPPOPULARRECENT