Thursday , August 17 2017
Home / دنیا / ماحولیات کے مسئلہ پر جی ۔ 20کانفرنس میں امریکہ یکا و تنہا

ماحولیات کے مسئلہ پر جی ۔ 20کانفرنس میں امریکہ یکا و تنہا

پیرس معاہدہ کی حمایت کرنے والے 18 ملکوں میں ہندوستان بھی شامل ، جرمن چانسلر کا بیان

ہمبرگ ۔ 8 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ماحولیات کے مسئلہ پر جی ۔ 20کانفرنس میں امریکہ آج اس وقت یکا و تنہا ہوگیا جب 18 ملکوں کے ساتھ ہندوستان میں پیرس ماحولیاتی معاہدہ کی حمایت کی۔ عالمی حدت کے خلاف جاری جدوجہد کی پروزور حمایت کرنے والے G-20 کے 18 ارکان کے ساتھ ہندوستان نے بھی پیرس معاہدہ کی تائید کی ہے۔ امریکہ اس معاہدہ سے واک آؤٹ کرچکا ہے۔ دو روزہ G-20 کانفرنس میں دیکھا گیا ہیکہ ہندوستان نے دہشت گردی سے نمٹنے اور عالمی تجارت کے علاوہ سرمایہ کاری کو فروغ دینے جیسے موضوعات پر غیرمعمولی تعاون کی پیشکش کی ہے۔ اس چوٹی کانفرنس میں وزیراعظم نریندر مودی نے عالمی قائدین کے ساتھ شرکت کی۔ میزبان لیڈر انجیلا مرکل اور امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ بھی اس کانفرنس کے روح رواں تھے لیکن جرمنی کے اس بندرگاہی شہر میں غیرمعمولی پرتشدد احتجاج بھی دیکھا گیا۔ احتجاجوں نے کانفرنس کے خلاف مظاہرے کئے۔ پولیس کے ساتھ جھڑپوں کے دوران تشدد بھڑک اٹھا۔ پولیس نے اس علاقہ کو چھاؤنی میں تبدیل کردیا تھا۔ بدبختی کی بات یہ ہیکہ پیرس معاہدہ کے خلاف امریکہ کا موقف برقرار تھا لیکن تمام دیگر ارکان نے ماحولیاتی تبدیلی پر اپنی مضبوط حمایت کا مظاہرہ کیا۔ جرمنی کی چانسلر انجیلا مرکل نے کہا کہ امریکہ نے اس معاہدہ سے واک آؤٹ کردیا ہے۔ صریحی طور پر یہ مشترکہ موقف نہیں ہے تمام جی ۔ 20 ارکان نے پیرس معاہدہ سے اتفاق کیا ہے صرف امریکہ نے معاہدہ کا واک آوٹ کیا۔ ٹرمپ نے جون میں اعلان کیا تھا کہ وہ پیرس ماحولیاتی معاہدہ سے دستبردار ہوں گے۔ ان کا کہنا ہیکہ زائد از 190 ملکوں نے اس معاہدہ سے اتفاق کیا ہے جو غیرمنصفانہ طور پر ہندوستان اور چین جیسے ممالک کو فائدہ پہنچے گا۔ ٹرمپ کے اس فیصلہ پر عالمی قائدین نے شدید تنقید کی تھی۔ پیرس معاہدہ کے مقاصد عالمی سطح پر درجہ حرارت میں اضافہ کو روکنا ہے۔ اس معاہدہ کو 12 ڈسمبر 2015ء کو منظور کرلیا گیا تھا جس میں 195 ممالک نے حصہ لیتے ہوئے اقوام متحدہ فریم ورک کنونشن میں شرکت کی گئی تھی۔ اس معاہدہ کی آخری مرتبہ 4 نومبر 2016ء میں توسیع کی گئی۔

جی ۔ 20کانفرنس میں ٹرمپ کی مودی سے
والہانہ ملاقات
ہمبرگ ۔ 8 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) G-20 قائدین آج یہاں دوسرے دن بھی اپنی چوٹی کانفرنس میں تبادلہ خیال کررہے تھے کہ صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ نے غیرمعمولی طور پر پیشرفت کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی سے والہانہ ملاقات کی اور ان کے ساتھ خوشگوار بات چیت بھی کی۔ ان دونوں قائدین کی بات چیت کی تصاویر کو ٹوئیٹر پر پوسٹ کیا گیا ہے۔ G-20 قائدین کے گروپ میں ٹرمپ نے مودی کی طرف بڑھ کر ان سے مصافحہ کیا اور ان کے قریب ٹھہر گئے۔ کانفرنس کے اختتام سے قبل عالمی قائدین کے یادگار لمحات کو تصویر میں قید کرلیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT