Saturday , September 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مارکٹ کمیٹی کے عہدیدار درمیانی افراد کو روکنے میں ناکام

مارکٹ کمیٹی کے عہدیدار درمیانی افراد کو روکنے میں ناکام

دھان کے کسانوں اور قولداروں کو شدید مالی نقصان
حسن آباد 16 ڈسمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حسن آباد مارکٹ یارڈ میں گزشتہ چند دنوں سے درمیانی افراد و بروکروں کی بیجا مداخلت کے باعث سخت محنت کے ذریعہ دھان کی پیداوار کرنے والے کسانوں کو شدید مالی نقصان پہنچ رہا ہے۔ نیز مقامی مارکٹ کمیٹی کے عہدیدار کسانوں کے مفادات کے تحفظ و درمیانی افراد کی مداخلت کو روکنے میں بُری طرح ناکام ہوچکے ہیں جس کا خمیازہ زرعی کسانوں و قولداروں کسانوں کو بھگتنا پڑرہا ہے۔ تفصیلات کے بموجب حسن آباد، کوہیڈہ، ملکانور اور اکنا پیٹھ منڈلس کے بیشتر کسان اپنی پیداوار و غلّہ کو بہتر قیمت خرید پر فروخت کرنے کی غرض سے مارکٹ یارڈ کا رُخ کرتے ہیں۔ تاہم دھان ، جوار ، مکئی کے خریدار بیواپاری مختلف بہانوں و حیلوں کے ذریعہ اقل ترین امدادی قیمت سے بھی کم قیمت میں اجناس خرید کر ایک ہفتہ یا دو ہفتوں کی مہلت سے ادائیگی کرتے ہیں۔ نقد ادائیگی پر 5 تا 7 فیصد کٹوتی بھی ہوتی ہے جس سے کسانوں کو شدید نقصان پہنچتا ہے۔ جس کے ازالہ کے لئے بعض کسان گزشتہ چند سالوں سے اندرا کرانتی پدکم (ویلگو) کی خریدی مراکز پر دھان فروخت کررہے تھے۔ تاہم مذإورہ مراکز پر کسانوں کا استحصال جاری ہے جس سے مایوس ہوکر ’’رعیتو کولی سنگم‘‘ کی ایماء پر حسن آباد، اکنا پیٹھ، ملکانور، کوہیڈہ اور حسن آباد کے کسانوں کی اکثریت نے آئندہ چند دنوں کے لئے دھان کی فروخت کو مسدود کردیا ہے۔ نیز کسان اس بات کے خواہاں ہیں کہ ریاستی حکومت فی الفور مداخلت کرتے ہوئے مارکٹ یارڈ حسن آباد اور دھان کے دیگر خریدی مراکز میں درمیانی افراد و بروکروں کی بیحا مداخلت کی روک تھام کے لئے سخت اقدامات کرے تاکہ کسانوں کو ہونے والے مالی نقصانات و استحصال سے بچایا جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT