Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / مالدیپ میں صحافیوں کا زبردست احتجاج، 19 گرفتار اور رہا

مالدیپ میں صحافیوں کا زبردست احتجاج، 19 گرفتار اور رہا

کولمبو ۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) مالدیپ میں پولیس نے صحافیوں اور دیگر سماجی کارکنوں کے ذریعہ منظم کئے گئے احتجاج کو منتشر کرنے کیلئے کالی مرچ کے اسپرے کا استعمال کیا۔ صحافیوں نے حکومت پر الزام عائد کیا ہیکہ پریس کی آزادی سلب کی جارہی ہے اور صحافیوں کو گرفتار کیا جارہا ہے۔ اب تک گرفتار کئے گئے صحافیوں کی تعداد 19 بتائی گئی ہے جنہیں مختصر مدت کیلئے حراست میں لیا گیا تھا۔ مالدیپ ایک جزیری ملک ہے جو اپنے ریسارٹس کیلئے مشہور ہے اور 2008ء میں مختلف سیاسی پارٹیوں کے وجود میں آنے کے بعد یہ ایک جمہوری ملک بن چکا ہے۔ تاہم حالیہ دنوں میں یہاں کے حالات غیرجمہوری طرزاختیار کرچکے ہیں۔ کل صدر کے دفتر کے قریب تقریباً 50 احتجاجیوں نے مظاہرے کئے تھے جو دراصل میڈیا کے خلاف مختلف قوانین سازی کی مخالفت کیلئے کئے جارہے ہیں۔ صدر یامین عبدالقیوم کی حکمراں جماعت نے پارلیمنٹ میں ایک بل پیش کیا ہے جس میں ہتک عزت یا توہین کیلئے بھاری جرمانے اور سزائے قید کی تجویز پیش کی گئی ہے۔ احتجاجی مظاہرین نے حکومت پر یہ بھی الزام عائد کیا ہیکہ عدالت کے اس حکمنامے کی اجرائی میں مبینہ طور پر حکومت کا بھی ہاتھ ہے جہاں مالدیپ کے ایک قیدم ترین اخبار کی اشاعت پر امتناع عائد کیا گیا ہے۔ احتجاج کے دوران جن دیگر معاملات کو اٹھایا گیا ان میں دو سال قبل لاپتہ ہوچکے ایک صحافی کے بارے میں تحقیقات میں تاخیر اور کچھ میڈیا تنظیموں پر عدالتی سرگرمیوں کی رپورٹنگ پر امتناع عائد کرنا شامل ہے۔

TOPPOPULARRECENT