Sunday , September 24 2017
Home / ہندوستان / مالیگاؤں دھماکہ مقدمہ، این ڈی اے حکومت پر الزام

مالیگاؤں دھماکہ مقدمہ، این ڈی اے حکومت پر الزام

سپریم کورٹ میں درخواست مفاد عامہ، حکومت نے استغاثہ کے کام میں دخل اندازی کی
نئی دہلی ۔ 11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) این ڈی اے حکومت پر استغاثہ کے کام میں دخل اندازی کا الزام عائد کرتے ہوئے سماجی کارکن ہرش مندر نے سپریم کورٹ میں ایک درخواست مفاد عامہ داخل کی ہے، جس میں کہا گیا ہیکہ 2008ء کے مالیگاؤں بم دھماکے مقدمہ میں این ڈی اے حکومت وکیل استغاثہ پر ’’نرمی برتنے کیلئے دباؤ‘‘ ڈال رہی ہے۔ ہرش مندر کی درخواست مفاد عامہ میں سابق این آئی اے عہدیداروں پر سابق خصوصی وکیل استغاثہ روہنی سالیان پر ملزمین کے ساتھ نرمی برتنے کیلئے دباؤ ڈالنے کا الزام عائد کیا ہے۔ غالباً یہ دباؤ سیاسی آقاؤں کی ایماء پر ڈالا جارہا تھا۔ روہنی سالیان نے جو اس مقدمہ کی خصوصی وکیل استغاثہ تھیں، حال ہی میں یہ بیان دیتے ہوئے کہا کہ این آئی اے کے عہدیدار نے ان سے کہا تھا کہ ملزم کے ساتھ نرمی برتی جائے، ہلچل پیدا کردی تھی اور ایک تنازعہ اٹھ کھڑا ہوا تھا۔ درخواست مفاد عامہ میں مرکزی حکومت کو ہدایت دینے کی درخواست کی گئی ہے کہ خصوصی وکیل استغاثہ کا تقرر ایسا کیا جائے جس میں وکیل استغاثہ منصفانہ انداز میں مقدمہ کی پیروی کرسکے۔ درخواست مفاد عامہ میں کہا گیا ہیکہ این آئی اے کے عہدیداروں کی جانب خصوصی وکیل استغاثہ سالیان پر دباؤ ایک سنگین معاملہ ہے کیونکہ اس طرح مقدمہ کی منصفانہ اور شفاف کارروائی ماتر ہوتی ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہیکہ ا ندیشہ کی معقول وجہ موجود ہے کہ وکلائے استغاثہ کو سیاسی آقاؤں کی خواہش کے سامنے گھٹنے ٹیکنے پڑتے ہیں۔ درخواست میں کہا گیا ہیکہ یہ درخواست اس یقین کے ساتھ پیش کی جارہی ہے کہ آزادانہ، منصفانہ اور شفاف مقدمہ کو سپریم کورٹ کی جانب سے یقینی بنایا جائے گا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT