Thursday , September 21 2017
Home / دنیا / مالی میں اقوام متحدہ کے اڈوں پرحملے

مالی میں اقوام متحدہ کے اڈوں پرحملے

دو اڈوں پر 9افراد ہلاک ‘ ڈوئنیزا اور ٹمبکٹومیں اقوام متحدہ کے امن کارکن متاثر
باماکو۔15اگست ( سیاست ڈاٹ کام) بندوق برداروں نے مالی میں اقوام متحدہ کے دو اڈوں پر حملہ کیا جس سے بحالی امن کارکن ‘ ایک گتہ دار اور چار مالی کے شہری ہلاک ہوگئے ۔ اقوام متحدہ نے کہا کہ ملک میں تازہ ترین حملے اس کے اڈوں پر کئے گئے ہیں ۔ بحالی امن کارکن اور مالی کا ایک فوجی علی الصبح ڈوئنیزا پر جو وسطی مالی میں واقع ہے ‘ حملہ میں ہلاک ہوگئے ۔ چند گھنٹوں بعد مزید 6 افراد جو بندوق بردار اور دستی بم بردار تھے ‘ ایک کار کے ذریعہ اقوام متحدہ کے سفارتی کیمپ ٹمبکٹوشمال مغربی مالی پہنچے ۔ اقوام متحدہ نے ایک علحدہ بیان میں اعلان کیا ہے کہ ان افراد نے مالی کے اقوام متحدہ کے چوکیداروں پر فائرنگ کردی جس کے نتیجہ میں پانچ چوکیدار فوری ہلاک ہوگئے ۔ ایک ملازم پولیس ‘ ایک شہری گتہ دار جس کی قومیت ہنوز واضح نہیں ہوسکی اس حملہ میں ہلاک ہوئے ۔ اقوام متحدہ کے ذریعہ کے بموجب دیگر 6 افراد بھی ہلاک ہوئے لیکن ایک شخص جو زخمی ہوگیا تھا ہلاک نہیں ہوا ۔ دو مشتبہ جہادی ڈوئنیزا کے حملہ میں اور 6 ٹمبکٹومیں ہلاک ہوگئے ۔ اس جارحانہ حملہ سے بحالی امن اقوام متحدہ کے کارکنوں کی جان کو درپیش خطروں کی اہمیت میں اضافہ ہوجاتا ہے ۔ اقوام متحدہ کی بحالی امن فوج مالی میں اس لئے تعینات کی گئی ہے کیونکہ یہ دنیا کا مہلک ترین ملک سمجھا جاتا ہے ۔ ایک اور بحالی امن کارکن ڈوئنیزا میں معمولی زخمی ہوا ‘ دیگر 6 افراد اور مالی کا ایک چوکیدار ٹمبکٹومیں زخمی ہوئے ۔ اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندہ برائے مالی محامت صالح انادیف نے اپنے بیان میں کہا کہ وہ اس بزدلانہ اور گھناؤنے حملے کی مذمت کرنے کیلئے مناسب الفاظ حاصل نہیں کرپارہے ہیں ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT