Monday , July 24 2017
Home / شہر کی خبریں / مانو میں ’’خواتین کے خلاف تشدد کے خاتمہ‘‘ پر شعور بیداری پروگرام

مانو میں ’’خواتین کے خلاف تشدد کے خاتمہ‘‘ پر شعور بیداری پروگرام

حیدرآباد، 14؍دسمبر(پریس نوٹ) مرکز برائے مطالعاتِ نسواں، کی جانب سے مولانا آزاد نیشنل اردو یونی ورسٹی میں ’’خواتین کے خلاف تشدد کا خاتمہ‘‘ کے موضوع پر 16 روزہ شعور بیداری پروگرام منعقد کیا گیا ۔ اقوام متحدہ کی جانب سے /25 نومبر کو’’ بین الاقوامی دن برائے خواتین کے خلاف تشدد کا خاتمہ ‘‘ قرار دیا گیا اور /10 دسمبر ’’ یوم انسانی حقوق‘‘ کے موقع پر اس کے اختتام کی تاکید کی گئی۔ اس ضمن میں مرکز برائے مطالعاتِ نسواں کی جانب سے کئی پروگرامز منعقد کیے گئے۔ ڈاکٹر شکیل احمد، پرو وائس چانسلر و رجسٹرار ، انچارج ‘مانو نے 25؍ نومبر کو پوسٹرس کی رسم ِاجراء انجام دی اور یونیورسٹی میں شعور بیداری پروگرام کی اہمیت و افادیت پر روشنی ڈالی۔ یونیورسٹی کے احاطہ میں مختلف مقامات پر ’’خواتین کے خلاف تشدد‘‘ کی روک تھام کے متعلق بینرس اور پوسٹرس لگوائے گئے ۔ طلباء وطالبات میں معلوماتی ورقیے تقسیم کئے گئے اور بیاچس لگوائے گئے۔مرکز کی ڈائر کٹر ، ڈاکٹر آمنہ تحسین کی قیادت میں سنٹر کے دیگر اسٹاف ممبرس اور طلباء و اسکالرز نے مختلف اوقات میں شعبہ جات کا دورہ کیا اور طلبہ کو خواتین کے مسائل و حقوق سے واقف کروایا۔ اس شعور بیداری پروگرام کو وسعت دیتے ہوئے ’ ’مہیتا تنظیم‘‘ کے اشتراک سے ایک توسیعی خطبہ بعنوان’’خواتین کے خلاف تشدد کا خاتمہ ۔ قانون اور اس پر عمل آوری‘‘ 8؍ ڈسمبر کو بہ مقام کمیو نیٹی سنٹر بورا بنڈہ میں منعقد کیا گیا۔ اس پروگرام میں مہمان خصوصی محترمہ جلیسہ سلطانہ یٰسین ‘ایڈوکیٹ‘ آرگنائزنگ سکریٹری‘ مسلم ویمن انٹیلکچویل فورم (حیدرآباد)اور محترمہ تسنیم جوہر ‘سابق پرنسپل‘پریہ درشنی پبلک اسکول، ملک پیٹ و نامورشاعرہ ‘نے بہ حیثیتِ مہمانِ اعزازی شرکت کی۔ جبکہ ڈاکٹر آمنہ تحسین نے صدارت کے فرائض انجام دیے۔ اس پروگرام کی کو آرڈینیٹر محترمہ رفیعہ نوشین (پروگرام کو آرڈینیٹر ’’مہیتا‘‘) تھیں انھوںنے نظامت کے فرائض انجام دیے اور مہمانوں کا تعارف بھی پیش کیا۔اس سلسلہ کا ایک اور توسیعی خطبہ بعنوان ’’عورتوں کے خلاف تشدد۔ قانون اور نفاذ‘‘ بہ مقام لکھنو منعقد کیا گیا۔اس پروگرام کو مانو لکھنو کیمپس کے اساتذہ نے منعقد کیا۔ جناب وپن کمار مشرا، آئی پی ایس نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT