Thursday , August 17 2017
Home / دنیا / مانچسٹر دہشت گرد حملے، مزید تین افراد گرفتار

مانچسٹر دہشت گرد حملے، مزید تین افراد گرفتار

مہلوک حملہ آور لبیائی نژاد سلمان عابدی کا القاعدہ سے مشتبہ ربط

لندن ۔ 24 ۔ مئی (سیاست ڈاٹ کام) مانچسٹر کانسرٹ میں گذشتہ روز 22 افراد کی ہلاکت کا سبب بننے والے دہشت گرد حملے کے ضمن میں پولیس نے آج مزید تین افراد کو گرفتار کرلیا جس کے ساتھ ہی زیرتحویل مشتبہ افراد کی تعداد چار ہوگئی ہے۔ پیر کی شب ہوئے حملے کے سلسلہ میں ایک 23 سالہ شخص کو گذشتہ روز گرفتار کیا گیا تھا۔ دھماکہ کرنے والے کی شناخت 22 سالہ لیبیائی نژاد سلمان عابدی کی گئی ہے۔ بی بی سی نے خبر دی ہیکہ گرفتار شدہ شخص عابدی کا بھائی اسمعیل ہے۔ گریٹر مانچسٹر پولیس کے بیان  میں کہا گیا ہیکہ ’’مانچسٹر ایرینا میں پیر کی شب ہوئے ہولناک حملے کی رواں تحقیقات کے ضمن میں جنوبی مانچسٹر میں پولیس نے وارنٹس کی اجرائی کے بعد تین افراد کو گرفتار کیا ہے‘‘۔ معتمد داخلہ ایمبررڈ نے گذشتہ روز کہا تھاکہ سیکوریٹی فورسیس کیلئے عابدی ایک نقطہ تک جانا پہچانا تھا اور باور کیا جاتا ہیکہ انٹلیجنس اداروں نے اس کے والدین کے آبائی وطن لبیا میں اس (عابدی) کے القاعدہ اور اسلامک اسٹیٹ (داعش) سے رابطوں کے تار پود کا پتہ بھی چلایا تھا۔ سلمان عابدی جو مانچسٹر میں پیدا ہوا تھا مقامی اسکول میں ابتدائی تعلیم حاصل کی۔ بعدازاں میں بزنس مینجمنٹ کی تعلیم کیلئے سالفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ لیا لیکن درمیان میں ترک تعلیم کرتے ہوئے دیگر سرگرمیوں میں ملوث ہوگیا۔ اس دوران اس مرتبہ لبیا کا سفر کیا۔ سمجھا جاتا ہیکہ 2011ء میں معمر قذافی کے زوال کے بعد اس کے ماں باپ بھی لبیا واپس ہوچکے تھے۔ ڈڈسبری مسجد کے امام محمد سعیدالعیطی نے کہا کہ سلمان عابدی کا بھائی اسمعیل اس مسجد میں قرآنی تعلیم کا مدرس ہے۔ العیطی نے کہا کہ ایک مرتبہ انہوں نے داعش کے خلاف خطاب کیا تھا جس پر سلمان نے انہیں بری صورت بناتے ہوئے نفرت کا چہرہ دکھایا تھا۔ مسجد کے امام نے حملہ آور سلمان عابدی کو نفرت بھرا شخص قرار دیا۔

TOPPOPULARRECENT