Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ماڈل جی ایس ٹی بل پر ٹریڈ انڈسٹرئیلسٹس کے ساتھ تبادلہ خیال

ماڈل جی ایس ٹی بل پر ٹریڈ انڈسٹرئیلسٹس کے ساتھ تبادلہ خیال

FTAPCCI پر اجلاس ، رام تیرتھ اسپیشل سکریٹری سنٹرل بورڈ آف اکسائز اینڈ کسٹمس ، چیف سکریٹری راجیو شرما کی شرکت
حیدرآباد ۔ 11 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : ماڈل جی ایس ٹی بل کو پہلی مرتبہ عوام میں رکھا گیا ہے تاکہ اس پر مباحث ہوں اور اگر ممکن ہو تو تجاویز پیش کئے جاسکیں ۔ آج یہاں فیڈریشن آف تلنگانہ آندھرا پردیش چیمبرس آف کامرس اینڈ انڈسٹری پر ماڈل جی ایس ٹی بل پر ٹریڈ انڈسٹرئیلسٹس اور اسٹیک ہولڈرس کے ساتھ تبادلہ خیال کیا گیا ۔ جی ایس ٹی بل کا مقصد قوانین کو واضح بنانا ہے اور قوانین آسان ہونے چاہئے ، ٹیکس دہندگان کے لیے سہولت بخش اور آسان ہوں اور بزنس کے لیے آسان ہوں ۔ ماڈل بل مسودہ میں گڈس اینڈ سروسیس کی سپلائی پر ٹیکس سے متعلق امور کا بھی احاطہ کیا گیا ۔ اس موقع پر مخاطب کرتے ہوئے مسٹر رام تیرتھ ، اسپیشل سکریٹری اینڈ ممبر ( بجٹ جی ایس ٹی ) سنٹرل بورڈ آف اکسائز اینڈ کسٹمس حکومت ہند نے کہا کہ ملک بھر میں منعقد ہونے والے اس طرح کے سلسلہ وار پروگرامس کا یہ پہلا پروگرام ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان جی ایس ٹی کو متعارف کرنے میں تیزی کے ساتھ پیشقدمی کررہا ہے اور اس کے لیے ایک ماڈل قانون کو عوام میں رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس ٹی جیسے ٹیکس کے نفاذ پر پھر اس میں بنیادی تبدیلیاں کرنا مشکل ہوتا ہے ۔ اس لیے اب ہر ایک کے لیے وقت ہے کہ وہ اس سلسلہ میں اپنی رائے اور تجاویز پیش کریں اور ٹیکس قانون کو ٹریڈ اینڈ انڈسٹری کی ترقی کے لیے معاون بنائیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ٹریڈ اور انڈسٹری کو فائدہ حاصل ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس ٹی پرماڈل مسودہ بل کو مختلف ریاستی حکومتوں کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے کے بعد لایا گیا ہے ۔ بعد ازاں اوپیندرا گپتا نے جی ایس ٹی ماڈل بل کے اہم نکات پر ایک پریزینٹیشن دیا اور کہا کہ یہ بل گورنمنٹ سائٹ پر انٹرنیٹ پر دستیاب ہے اور اسے 267 چیاپٹرس ، 178 سیکشنس 4 شیڈولس میں تقسیم کیا گیا ہے ۔ قبل ازیں مسٹر جی سرینواس سینئیر وائس پریسیڈنٹ فیڈریشن نے خیر مقدم کیا ۔ اس موقع پر مخاطب کرنے والوں میں آر شکنتلا ، چیف کمشنر آف کسٹمس سنٹرل اکسائز اینڈ سرویس ٹیکس حیدرآباد اینڈ ویزاگ زون ، ڈاکٹر اجئے مشرا پرنسپال سکریٹری ریونیو ، ڈاکٹر راجیو شرما چیف سکریٹری حکومت تلنگانہ شامل تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT