Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / مایاوتی کیخلاف ریمارکس پر مدھیہ پردیش اسمبلی میں ہنگامہ

مایاوتی کیخلاف ریمارکس پر مدھیہ پردیش اسمبلی میں ہنگامہ

بی جے پی سے برطرف لیڈر کی گرفتاری کا مطالبہ، ایوان میں بی ایس پی ارکان کی نعرہ بازی
بھوپال۔21 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش اسمبلی میں آج زبردست ہنگامہ آرائی دیکھی گئی جہاں بی ایس پی ارکان اسمبلی نے اپنی پارٹی کی لیڈر اور سابق چیف منسٹر مایاوتی کے خلاف بی جے پی کے رکن کے توہین امیز ریمارکس پر احتجاج کیا۔ ان احتجاجی ارکان نے دیاشنکر سنگھ کی گرفتاری کا سوال اٹھایا اور کہا کہ انہوں نے مایاوتی کے کردار کا مسئلہ اٹھایا تھا۔ حکومت کو چاہئے کہ وہ فوری دیاشنکر کو گرفتار کرنے کا حکم جاری کرے۔ اس ہنگامہ کے دوران اسپیکر نے وقفہ سوالات کے موقع پر ایوان کی کارروائی کو دو مرتبہ ملتوی کردیا۔ ریاست مدھیہ پردیش میں بی ایس پی کے چار ارکان اسمبلی نے نیلی ٹوپی اور ڈوپٹہ اوڑھے ایوان میں احتجاج کیا اور پارٹی کا انتخابی نشان لہرایا۔ وقفہ سوالات کے دوران اس مسئلہ کو اٹھاکر ایوان کے وسط میں پہنچ کر احتجاج کیا۔ یہ ارکان بی ج پی کے برطرف شدہ رکن دیاشنکر کو فوری گرفتار کرنے کا مطالبہ کررہے تھے۔ کانگریس کے ارکان نے بھی ان کے مطالبہ کی حمایت کی۔ بہوجن سماج پارٹی کے ارکان اسمبلی اوشاچودھری اور شیلا تیاگی نے اپنے لیجسلیٹیو لیڈر ستیہ پرکاش شکوار کی قیادت میں احتجاج کیا۔

کرسی صدارت سے خاموش رہنے کی اپیلوں کو نظرانداز کرتے ہوئے یہ ارکان مسلسل شور کررہے تھے اسپیکر کے ایوان کے وسط میں پہونچ کر شور و غل کرنے والے ارکان نے کہا کہ وہ واپس اپنی نشستوں پر بیٹھے جائیں لیکن ان کی آواز شور و غل میں دب کر رہ گئی اس پر اسپیکر ستیا شرن شرما نے ایوان کی کارروائی کو 10منٹ کے لئے ملتوی کردی۔ بی ایس پی کے اس مطالبہ کی مخالفت کرتے ہوئے اسٹیٹ لیجسلیٹیو امور کے وزیر ناروٹم مشرا نے کہا کہ اس مسئلہ کو ایوان میں اٹھایا نہیں جاسکتا کیوں کہ یہ معاملہ اترپردیش سے تعلق رکھتا ہے۔ انہوں نے بی ایس پی ارکان کو مشورہ دیا کہ وہ اس مسئلہ کو پارلیمنٹ میں اٹھائیں۔ بی ایس پی رکن اسمبلی شیلاتیاگی نے ایوان کے باہر بتایا کہ ہم نے اپنی لیڈر مایاوتی کے خلاف دیاشنکر کے اہانت آمیز ریمارکس کے مسئلہ پر ایک تحریک سرزنش نوٹس پیش کی ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ فوری انہیں گرفتار کیا جائے۔ کانگریس کے سینئر رکن اسمبلی اجئے شگوار دیگر پارٹی رکن جیتو پٹواری نے بھی بی ایس پی کے مطالبہ کی حمایت کی اور انوہں نے بی جے پی کو دلت دشمن پارٹی قرار دیا۔

TOPPOPULARRECENT