Wednesday , September 20 2017
Home / انتقال نام / مجاہد آزادی سی ایچ راجیشور راؤ کا انتقال

مجاہد آزادی سی ایچ راجیشور راؤ کا انتقال

حیدرآباد۔  9مئی ( پی ٹی آئی/این ایس ایس) تلنگانہ کے ممتاز بزرگ مجاہد آزادی اور سرسلہ کے سابق رکن اسمبلی سی ایچ راجیشور راؤ کا طویل علالت کے بعد آج حیدرآباد کے ایک خانگی ہاسپٹل میں انتقال ہوگیا ۔ ان کی عمر 93 سال تھی ۔ تلنگانہ کے بزرگ رہنما راجیشور راؤ کے پسماندگان میں بیوہ کے علاوہ تین دختران اور ایک فرزند شامل ہیں ۔ وہ ماہر معاشیات سی ایچ ہنمنت راؤ اور مہاراشٹرا کے گورنر سی ایچ ودیا ساگر راؤ کے بڑے بھائی تھے ۔ راجیشور راؤ کا تعلق ضلع کریم نگر میں ویملواڑہ کے مارپاکا گاؤں سے تھا ۔ انہوں نے سابق ریاست حیدرآباد کی نظام حکومت کے خلاف مسلح جدوجہد میں بھی حصہ لیا تھا ۔ انہوں نے بحیثیت ایک کمیونسٹ اپنے سیاسی کریئر کا آغاز کیا تھا ۔ وہ 1967 ‘ 1978 ‘ 1985 اور 1994ء کے اسمبلی انتخابات میں کریم نگر کے حلقہ سرسلہ سے منتخب ہوئے تھے ۔ بعدازاں راجیشور راؤ  کمیونسٹ پارٹی چھوڑ کر تلگودیشم پارٹی میں شامل ہوگئے تھے اور 2004ء تک تلگودیشم رکن اسمبلی کی حیثیت سے اسمبلی میں حلقہ سرسلہ کی نمائندگی کی اور 2004ء میں سرگرم سیاست سے سبکدوش ہوگئے تھے ۔ راجیشور راؤ کے اکلوتے بیٹے سی ایچ رمیش کریم نگر کے حلقہ اسمبلی ویملواڑہ کے ٹی آر ایس رکن ہیں ۔ تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور آندھراپردیش کے چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے راجیشور راؤ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے تلنگانہ کیلئے ان کی خدمات کو خراج عقیدت ادا کیا ۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے بھی راجیشور راؤ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ پردیش کانگریس کے ترجمان بی کملاکر راؤ نے کہا کہ راجیشور راؤ عوامی زندگی میں اخلاق و شائستگی کا ایک عملی نمونہ تھے ۔ لوک ستہ کے بانی ڈاکٹرجئے پرکاش نارائن نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ ملک ایک جمہوری پسند رہنما سے محروم ہوگیاہے جنہوں نے زندگی بھر ایک طاقتور ہندوستان اور تلگو عوام کی ترقی اور خوشحالی کیلئے انتھک جدوجہد کی تھی ۔ تلنگانہ تلگودیشم پارٹی کے کارگذار صدر اے ریونت ریڈی اور کانگریس کے رکن پارلیمنٹ ہنمنت راؤ نے بھی راجیشور راؤ کو خراج عقیدت ادا کیا ۔

TOPPOPULARRECENT