Tuesday , October 24 2017
Home / جرائم و حادثات / مجلسی کارکنوں نے سنگباری اور حملہ کیا تھا‘عدالت میں پی ۔مدھو کا بیان قلمبند

مجلسی کارکنوں نے سنگباری اور حملہ کیا تھا‘عدالت میں پی ۔مدھو کا بیان قلمبند

حیدرآباد۔ 2 نومبر (سیاست نیوز) سی پی ایم کے سابق رکن راجیہ سبھا و آندھرا پردیش کے موجودہ جنرل سیکریٹری مسٹر پی مدھو نے آج نامپلی کریمنل کورٹ میں مجلسی کارکنوں کی جانب سے حملے کے واقعہ میں اپنا بیان قلمبند کروایا۔ 16 ویں ایڈیشنل چیف میٹروپولیٹن مجسٹریٹ کے اجلاس پر مسٹر مدھو نے اپنے بیان میں بتایا کہ 30 نومبر سال 2007ء کو وہ فلک نما کے علاقہ تیگل کنٹہ مصطفی نگر اور نواب صاحب کنٹہ میں اپنی پارٹی کارکنوں کے ہمراہ ایک پد یاترا میں مصروف تھے کہ تقریباً 20 افراد پر مشتمل مجلسی کارکنوں نے ان کی پد یاترا میں رکاوٹ پیدا کردی۔ اتنا ہی نہیں گلی کوچوں سے مجلسی کارکنوں نے مسٹر مدھو اور دیگر سی پی ایم کارکنوں کی پدیاترا پر سنگباری کی جس میں بعض سی پی ایم کارکن زخمی ہوگئے۔ مسٹر مدھو نے اپنے بیان میں مزید بتایا کہ حملہ آور سنگباری کے بعد پولیس کو دیکھ کر بھاگ گئے۔ سابق رکن پارلیمنٹ نے عدالت میں موجود ملزمین کی نشاندہی کی اور انہیں اس واقعہ کا ذمہ دار قرار دیا۔ مسٹر مدھو نے اپنے بیان میں بتایا کہ حملے سے متعلق ایف آئی آر درج کئے جانے کے بعد پولیس نے ان کا بیان قلمبند نہیں کیا۔ واضح رہے کہ فلک نما پولیس نے 11 مجلسی کارکن بشمول مرزا اسد اللہ بیگ ساکن جہاں نما، محمد سلیم تیگل کنٹہ، غفار خان ساکن مصطفی نگر، محمد تیور علی مصطفی نگر، بابر خاں جہاں نما، حبیب عثمان عرف بلال، محمد شکیل ساکن شاستری پورم، ایوب خان ساکن تیگل کنٹہ کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعات 147، 148، 341، 506، 325 ، 324 دفعات کے تحت مقدمہ درج کرتے ہوئے مجلسی کارکنوں کو گرفتار کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT