Tuesday , August 22 2017
Home / سیاسیات / مجوزہ گجرات اسمبلی انتخابات میں ریزرویشن کا مسئلہ حاوی

مجوزہ گجرات اسمبلی انتخابات میں ریزرویشن کا مسئلہ حاوی

پاٹیدار ایجی ٹیشن سے بی جے پی کے اقتدار کو خطرہ لاحق
احمد آباد ۔ 16 ۔ مئی (سیاست ڈاٹ کام) پاٹیدار برادری کیلئے تحفظات (کوٹہ) کا مطالبہ آئندہ سال گجرات کے اسمبلی انتخابات میں اہم موضوع ہوسکتا ہے جبکہ اعلی ذاتوں میں معاشی طور پر پسماندہ افراد نے 10 فیصد ریزرویشن کا اعلان کر کے اس تنازعہ کو ختم کرنے بی جے پی کی کوششیں ناکام دکھائی دے رہی ہیں۔ تحریک تحفظات کے علمبردار ہاردیک پٹیل کی زیر قیادت پیشہ وار برادری کی 9 ماہ طویل جدوجہد کے بعد ریاستی حکومت نے حال ہی میں ریزرویشن کا اعلان کر کے اس کمیونٹی کی دلجوئی کی کوشش کی ہے ۔ تاہم پاٹیدار انامت آندولن سمیتی نے اس تجویز کو یکسر مسترد کردیا۔ قبل ازیں ریاستی حکومت نے پٹیل کوٹہ ایجی ٹیشن کا توڑ کرنے کیلئے اعلیٰ ذاتوں کے غریب طلبہ کو مالی امداد فراہم کرنے کیلئے ایک اسکیم مکھیہ منتری یوا سوالمبھن یوجنا کا اعلان کیا تھا لیکن یہ کوشش بھی ناکام ہوگئی ۔ اپوزیشن کانگریس نے حکومت کے یہ اقدام کو پاٹیداروں کیلئے لالی پپ دینے کے مترادف قرار دیتے ہوئے کہاکہ آئندہ اسمبلی انتخابات میںپارٹی اقتدار میں آنے پر معاشی طور پر پسماندہ طبقات کیلئے کوٹہ میں 20 فیصد تک اضافہ کیا جائے گا۔کانگریس جو کہ ریاست میں گزشتہ 25 سال سے اقتدار سے محروم ہے ۔ پٹیل تحریک تحفظات کے بعد گزشتہ سال ڈسمبر میں منعقدہ مجالس مقامی کے انتخابات میں  غیرمعمولی کامیابی پرحیرت زدہ ہوگئی ۔ ریاست کی سیاست میں نریندر مودی جیسے لیڈر کا فقدان اور کوٹہ ایجی ٹیشن کے تنازعہ میں پھنسی بی جے پی جو کہ گزشتہ 20 سال سے تمام انتخابات میں کامیاب و کامران ہوتے آرہی ہے ، سال 2017 ء کے اسمبلی انتخابات میں اپنی کامیابی کا پرچم بلند رکھنے اور کارکنوں میں جوش و جذبہ برقرار رکھنے میں مشکلات سے دوچار ہے۔ بی جے پی کو یہ امید ہے کہ انتخابات کا موسم شروع ہونے سے قبل اعلیٰ ذاتوں کے معاشی طور پر پسماندہ افراد بشمول پاٹیداروں کیلئے 10 فیصد ریزرویشن کا اعلان کر کے کوٹہ کا مسئلہ حل کرلیا جائے گا ۔ پارٹی کے ایک سینئر لیڈر نے آج یہ اطلاع دی جبکہ گجرات کانگریس کے جنرل سکریٹری نتیش ویاس نے بتایا کہ مجوزہ اسمبلی انتخابات میں تحفظات کا مطالبہ حاوی رہے گا  اور پاٹیدار برادری کا یہ مطالبہ جانبدارانہ اور منصفانہ ہے اور حکومت کی جانب سے 10 فیصد ریزرویشن کا اعلان بہت ہی کم اور تاخیر سے کیا گیا ہے ۔ اگر کانگریس کو اقتدار میں لایا گیا تو اس بی سی ریزرویشن کو 20 فیصد تک اضافہ کردیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT