Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ’’محبتِؔوطن‘‘ ہمارا فطری حق ہے: مولانا غوثوی شاہ کا بیان

’’محبتِؔوطن‘‘ ہمارا فطری حق ہے: مولانا غوثوی شاہ کا بیان

حیدرآباد۔ 14آگسٹ(راست)  یوم آزادی کے موقع پرسکریٹری جنرل عالمی مذاھب کانفرنس مولانا غوثوی شاہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہندوستان میرا وطن ہے اور مجھے اِس سرزمین ہندوستاں سے محبت ہے غالباًاِسی سے میرا خمیر بھی ہے اور شاید یہی مٹی مجھے اپنے خرمنِ بیکراں میں چُھپا بھی لے اور اِسی رشتہ ناتے مجھے بھی اپنے وطن کی عظمت کے گیت بر سرِ عام سنانا اور اسکی رفعت وشوکت کے گیت گانا ہے ۔آج ہندوستان کو آزادی حاصل ہوئے تقریبًا 70سال کا عرصہ ہوچکا۔ہندوستان یہ وہ سرزمین ہے جسے علامہ اقبالؒؔ کے الفاظ میں حضرت خواجہ معین الدین چشتی ؒ نے اپنے انفاسِ قدسیہ سے معطر فرمایا اور جسے بابا گرونانک جی نے اپنا پیار دیا ۔ جہاں لعلؔ وجواہرؔ نے جنم لیا اور جہاں پنڈت ومولاناؔ میں دانت کا ٹی روٹی رہی ہے ۔ تاج ؔمحل ‘ قطبؔ میناراورچارمیناریہاں کی عظمت ومحبت کے نشان ہیں ۔غرض کہ اس دیش کی پاک اور پَوتر  ّ فضاء میں میںؔ وہ ہَوا بھی پاتا ہوں جسکے تعلق سے حضرت علیؓ نے فرمایا کہ سب سے زیادہ اچھی اور صحت مند ہو ا ہندوستان کی ہے اور یہ وہ سرزمین ہے جسکے تعلق سے پیغمبر اسلام حضرت سیدنا محمد ﷺ نے فرمایا ’’مجھے ہندوستان سے بوئے محبت آتی ہے‘‘ کیوں نہ ہو یہ وہی خطہ زمین ہے جہاں بے شمار اولیائِ اورعُشّاق ِرسولؐ موجود ہیںاورجہاں سب سے پہلے نوع انسانیت کے جدّ ِ اعلیٰ حضرت آدم ؐ نے اپنا قدم جمایا ۔واضح باد کہ خود پیغمبر اسلام حضرت سیدنا محمد ﷺنے اپنے وطن عزیز سے محبت فرمائی ہے گویا ’’محبت ِؔوطنؔ ‘‘ ہمارا فطری حق ہے ‘‘ میںؔ اپنے اہل وطن کو توجہ دلاتا ہوں کہ وہ اخلاص ومحبت اور اتحاد ویگانت کے رشتہ کو مضبوط کرلیں اور امن وسلامتی کی فضا کو ہموار رکھیں۔ہم اِس وقت اُن لوگوں سے ہوشیار رہیں جو ملک کی فضا کو خراب کرنے کیلئے اختلاف وانتشار کو ہَوا دینا چاہتے ہیں۔ دعا ہے کہ خدا ہمارے ملک کے وقار اور اُسکی عظمت کو برقرار رکھے اور ہمارے سب اہل وطن ہمیشہ کیلئے سر بلند رہیں۔

TOPPOPULARRECENT