Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / محبوبہ مفتی جموںو کشمیر کی پہلی خاتون چیف منسٹر ہونگی

محبوبہ مفتی جموںو کشمیر کی پہلی خاتون چیف منسٹر ہونگی

لیجسلیچر پارٹی لیڈر کی حیثیت سے انتخاب : منتخبہ حکومت کے قیام کی راہ ہموار
سرینگر 24 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) محبوبہ مفتی کو آج اتفاق رائے سے پی ڈی پی کی لیجسلیچر پارٹی لیڈر منتخب کرلیا گیا ۔ اس طرح ریاست میں محبوبہ مفتی کے پہلی خاتون چیف منسٹر بننے کی راہ ہموار ہوگئی ہے ۔ اس تعلق سے گذشتہ دو ماہ سے تعطل تھا تاہم محبوبہ مفتی کی گذشتہ دنوں دہلی میں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کے بعد حالات میں تبدیلی پیدا ہوگئی ہے ۔ پارٹی کے ایک لیڈر نے کہا کہ محبوبہ مفتی چیف منسٹر جموںو کشمیر کے عہدہ کیلئے پارٹی کی امیدوار ہیں۔ 56 سالہ محبوبہ مفتی کو پی ڈی پی ارکان اسمبلی کے ایک اجلاس میں لیڈر منتخب کرلیا گیا ۔ اجلاس میں ارکان اسمبلی ‘ ارکان کونسل ‘ ارکان پارلیمنٹ نے شرکت کی جو ان کی قیامگاہ پر منعقد ہوا تھا ۔ محبوبہ مفتی چیف منسٹر کے عہدہ کیلئے پارٹی کی امیدوار ہیں۔ سینئر پارٹی لیڈر مظفر بیگ نے اجلاس کے بعد یہ بات بتائی ۔ محبوبہ مفتی نے لیڈر منتخب کرنے پر پارٹی کے ارکان اسمبلی سے اظہار تشکر کیا اور کہا کہ ارکان نے ان پر بھروسہ کیا ہے ۔ انہوں نے پی ڈی پی کے ورکرس اور قائدین سے بھی اظہار تشکر کیا جنہوں نے مشکل وقت اور بحران کی کیفیت میں پارٹی کی حمایت کی ہے ۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے مظفر بیگ نے کہا کہ اب ریاست میں جمہوری طور پر منتخبہ حکومت کا قیام محض ایک رسمی کارروائی رہ گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اب صرف ایک کام رہ گیا ہے کہ گورنر سے ملاقات کی جائے ۔ محبوبہ مفتی اور بی جے پی کے لیڈر تقریب حلف برداری کی تاریخ کا تعین کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ اب یہ ایک محض رسمی کارروائی رہ گئی ہے ۔ ہم کو امید ہے بہت جلد ریاست میں ایک سیاسی حکومت قائم ہوجائیگی ۔ تشکیل حکومت کیلئے بی جے پی کو پی ڈی پی کی شرائط سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ ایسی کوئی شرائط عائد نہیں کی گئیں ۔ اس اتحاد کا ایجنڈہ بہت جامع ہے اس میں مزید نئے مسائل کو شامل کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔ واضح رہے کہ چند دن قبل بی جے پی کے جنرل سکریٹری رام مادھو نے بھی کہا تھا کہ پی ڈی پی نے تشکیل حکومت کیلئے بی جے پی کے سامنے کوئی شرائط نہیں رکھے ہیں۔ مظفر بیگ نے کہا کہ رام مادھو کا دعوی درست تھا ۔ کوئی شرائط عائد نہیں کی گئی ہیں کیونکہ اتحاد کا ایجنڈہ بہت جامع ہے ۔ یہ ایجنڈہ سابق چیف منسٹر مفتی محمد سعید مرحوم نے طئے کیا تھا اور اس پر عمل کیا جائیگا ۔

TOPPOPULARRECENT