Saturday , October 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / محبوب نگر کو فوری قحط زدہ ضلع قرار دینے کا مطالبہ

محبوب نگر کو فوری قحط زدہ ضلع قرار دینے کا مطالبہ

آبپاشی پراجکٹوں کی تکمیل پر زور، شاد نگر میں پی سی سی صدر اتم کمار ریڈی کا بیان
شاد نگر /4 اکتوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع محبوب نگر کو تلنگانہ حکومت فوری خشک سالی سے متاثرہ ضلع قرار دینے اور کسانوں کو ہر ممکنہ سہولت مہیا کرنے کے علاوہ انتخابات میں ریاست کے کسانوں کے ساتھ کئے گئے وعدوں پر عمل آوری کا تلنگانہ پردیش کانگریس صدر اتم کمار ریڈی نے مطالبہ کیا۔ وہ شاد نگر تعلقہ کے کیشم پیٹ منڈل کے موضع سنگم میں ایک تقریب میں شرکت کے موقع پر میڈیا نمائندوں سے خطاب کر رہے تھے۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس نے وعدہ کیا تھا کہ کسانوں کے ایک لاکھ روپئے کے قرضہ جات معاف کردیئے جائیں گے، لیکن اقتدار حاصل کرنے کے بعد ٹی آر ایس حکومت اپنے وعدوں کو پورا کرنے میں یکسر ناکام ہو گئی، جب کہ حکومت کی کسانوں کے متعلق غلط پالیسی کی وجہ سے ریاست بھر کے کسان کئی مسائل سے دو چار ہیں۔ انھوں نے ٹی آر ایس حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ بلند بانگ وعدوں اور دعووں کے ذریعہ اقتدار حاصل کرنے والی پارٹی عوامی مسائل کو نظرانداز کر رہی ہے۔ انھوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ انتخابات کے دوران کئے گئے وعدوں کو پورا کرے۔ انھوں نے کہا کہ کسانوں کو درپیش مسائل کے سلسلے میں کانگریس کی جانب سے 5 اکتوبر کو اسمبلی میں آواز اٹھائی جائے گی اور کسانوں کے مسائل حل کرنے کے لئے حکومت پر دباؤ ڈالا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت میں زرعی شعبہ پوری طرح ٹھپ ہوچکا ہے۔ انھوں نے کانگریس دور حکومت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس کے دور میں دھان کی پیداوار میں زبردست اضافہ ہوا تھا، لیکن ٹی آر ایس کے دور میں دھان کی پیداوار میں گراوٹ آئی ہے اور فی الحال 66 لاکھ ٹن دھان کی پیداوار ہوئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ریاست میں ناکافی بارش اور حکومت کی عدم توجہی کے سبب ریاست کے کسان شدید مشکلات سے دوچار ہیں۔ انھوں نے تلنگانہ حکومت پر زور دیا کہ ضلع محبوب نگر میں واقع آخری مراحل کے پراجکٹوں کی جلد تکمیل کے لئے رقمی منظوری عمل میں لائی جائے۔ انھوں نے بتایا کہ دھان کی خریدی کے لئے مرکزی حکومت نے 1400 کروڑ روپئے کا اعلان کیا اور تلنگانہ حکومت کی جانب سے 200 کروڑ روپئے شامل کرکے 1600 کروڑ روپئے کا اعلان کیا گیا ہے۔ انھوں نے بڑے پراجکٹوں کے کاموں کی جلد تکمیل کرکے کسانوں کو ہر ممکنہ سہولت فراہم کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کسانوں کے معاملے میں کسی بھی طرح کی لاپرواہی اور کوتاہی کو کانگریس پارٹی برداشت نہیں کرے گی۔ انھوں نے کسانوں کے ایک لاکھ روپئے کے قرض کو ایک ہی وقت میں معاف کرنے کا تلنگانہ حکومت سے مطالبہ کیا۔ اس موقع پر رکن اسمبلی ومشی چندر ریڈی، رکن اسمبلی سمپت کمار، سابق ایم ایل اے شاد نگر سی پرتاب ریڈی، سابق ایم ایل اے جڑچرلہ ڈاکٹر ملو روی، شاد نگر کے مختلف منڈلوں کے کانگریس صدور، ایم پی ٹی سیز، سرپنچوں، ارکان بلدیہ اور مقامی کانگریس قائدین بڑی تعداد میں موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT