Thursday , August 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / محبوب نگر کو قحط زدہ ضلع قرار دینے کا مطالبہ

محبوب نگر کو قحط زدہ ضلع قرار دینے کا مطالبہ

جڑچرلہ میں رکن پارلیمنٹ وی ہنمنت راؤ کی پریس کانفرنس
جڑچرلہ /6 ستمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) وی ہنمنت راؤ ایم پی نے آج جڑچرلہ گیسٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی اور ریاستی حکومتوں پر سخت تنقید کی اور کہا کہ نریندر مودی زیر قیادت مرکزی حکومت اور تلنگانہ میں کے سی آر کی قیادت میں ٹی آر ایس حکومت کی غلط پالیسیوں کے سبب ملک کے عوام مصائب میں مبتلا ہیں۔ ان پالیسیوں کے مضر اثرات سے عوام کو واقف کروانے کے لئے کانگریس سڑکوں پر احتجاج کرنے پر مجبور ہوئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ بی جے پی قائدین پارلیمنٹ سیشن میں صرف شور شرابا کر رہے ہیں اور الٹا کانگریس کے ارکان پارلیمنٹ پر ترقیاتی کاموں میں رکاوٹ پیدا کرنے کے الزامات عائد کر رہے ہیں۔ انھوں نے چندرا بابو نائیڈو اور کے چندر شیکھر راؤ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ دونوں قائدین صرف بیرونی ممالک کے دوروں میں مصروف دکھائی دے رہے ہیں۔ کوئی امریکہ کا تو کوئی چین کا دورہ کر رہا ہے، جب کہ عوام مختلف قسم کے امراض کا شکار ہو رہے ہیں۔ ڈینگو اور سوائن فلو سے کئی افراد متاثر ہو رہے ہیں، جن کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ انھوں نے مودی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ انتخابات سے قبل عوامی فلاح و بہبود کے کئی وعدے کئے گئے، بیرونی ممالک سے کالادھن لاکر ملک کو ترقی یافتہ بنانے کی باتیں کی گئیں، لیکن ایسا کچھ بھی نہیں ہوا۔ بھارت کو سوچھ بنانے کی بجائے ملک میں کروڑوں روپئے کے اسکامس ہو رہے ہیں۔ انھوں نے تلنگانہ بالخصوص ضلع محبوب نگر کو خشک سالی سے متاثرہ قرار دینے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ ضلع کے غریب عوام سخت مشکلات سے دو چار ہیں۔ انھوں نے ضلع محبوب نگر میں زیر تعمیر آبپاشی پراجکٹس کو عاجلانہ طورپر مکمل کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ مناسب سہولتوں کی کمی کے سبب کسان خودکشی پر مائل ہو رہے ہیں۔ بعد ازاں کانگریس پارٹی کی جانب سے جڑچرلہ قومی شاہراہ روڈ نمبر 44 پر راستہ روکو احتجاج منظم کیا گیا، جس میں وی ہنمنت راؤ ایم پی، وٹھل راؤ سابق رکن پارلیمنٹ محبوب نگر، عبید اللہ کوتوال، سمپت کمار، رام موہن، ڈاکٹر ملو روی، اشوک کمار، سدرشن گوڑ، ایم پرکاش اور دیگر نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT