Friday , June 23 2017
Home / جرائم و حادثات / محبوب گنج کا مزدور عادی سارق بن گیا

محبوب گنج کا مزدور عادی سارق بن گیا

بری عادتوں کے باعث قفل شکنی کی وارداتوں میں ملوث
حیدرآباد ۔ 15 فبروری (سیاست نیوز) نلہ کنٹہ پولیس نے ایک عادی سارق کو گرفتار کرتے ہوئے اس کے قبضہ سے مسروقہ طلائی زیورات اور دیگر اشیاء برآمد کرلی۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ایسٹ زون ڈاکٹر وی رویندر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ 25 سالہ پٹھان چاند پاشاہ متوطن ضلع کرنول جو عثمانیہ یونیورسٹی کے قریب کرایہ کے مکان میں مقیم تھا، جس نے سال 2011ء روزگار کی تلاش میں حیدرآباد منتقل ہوا تھا اور عثمانیہ یونیورسٹی کے قریب رہنے لگا۔ چاند پاشاہ نے سنتوشی عرف شبانہ سے لو میاریج کی اور ملک پیٹ محبوب گنج میں مزدور کا کام کرنے لگا۔ اسی دوران وہ بری عادتوں کا شکار ہوگیا اور اپنی خواہشات کی تکمیل کیلئے سرقوں میں ملوث ہونے لگا۔ تفتیش کے دوران گرفتار سارق نے بتایا کہ اس نے سابق میں نلہ کنٹہ، عنبرپیٹ، چلکل گوڑہ، گوپالا پورم اور دیگر مقامات پر قفل شکنی کے ذریعہ سرقوں میں ملوث ہوا۔ پولیس نے بتایا کہ سرقہ کی واردات انجام دینے کیلئے مسعود اماں نے چاند پاشاہ کا بھرپور تعاون کیا تھا اور پولیس اس کی تلاش کررہی ہے۔ گرفتار سارق کے قبضہ سے نلہ کنٹہ پولیس نے 13 تولے مسروقہ طلائی زیورات جس کی مالیت 3 لاکھ 90 ہزار بتائی جاتی ہے، برآمد کرلیا۔ پولیس نلہ کنٹہ نے آٹو کے سرقہ میں ملوث ہونے والے ایک سارق کو گرفتار کرلیا۔ بتایا  جاتا ہیکہ 35 سالہ اے اشوک نے سڑک پر پارک کئے ہوئے آٹو کو نشانہ بناتے ہوئے اس کا سرقہ کرلیا تھا۔ پولیس نے مسرقہ آٹو کو برآمد کرتے ہوئے اشوک کو گرفتار کرلیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT