Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / محروس نوجوان جیش محمد میں شامل ہونے کٹر بن گئے

محروس نوجوان جیش محمد میں شامل ہونے کٹر بن گئے

کشمیر و دیگر جگہ مسلمانوں پر مظالم کے ویڈیو دکھائے گئے، پولیس کا بیان
نئی دہلی ، 6 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ممنوعہ جیش محمد کے ساتھ مبینہ روابط کی پاداش میں گرفتار تین نوجوانوں سے تفتیش کرنے والوں نے آج کہا کہ یہ تینوں کو جموں و کشمیر، مظفرنگر اور عراق میں مسلمانوں کے خلاف مبینہ مظالم سے متعلق ویڈیوز دکھائے گئے تاکہ انھیں اپنی تنظیم میں بھرتی کیا جائے اور قومی دارالحکومت میں دہشت گردانہ حملے انجام دیئے جاسکیں۔ ایک سینئر پولیس عہدہ دار نے کہا کہ اصل ملزم ساجد ایک سوشل میڈیا پیج سے جڑا تھا جہاں اس کی ملاقات سائبر ماہر طلحہ سے ہوئی جو جیش محمد سربراہ مسعود اظہر کا قریبی مانا جاتا ہے۔ مسعود اظہر 2001ء کے پارلیمنٹ حملہ کیس اور جنوری میں پٹھان کوٹ کے فضائیہ اڈہ پر پیش آئے دہشت گردانہ حملہ کے سلسلے میں ہندوستان کو مطلوب ہے۔ ساجد نے بعد میں دیگر ملزم نوجوانوں سمیر احمد اور شاکر انصاری کو ورغلایا اور اپنے ساتھ شامل کرتے ہوئے انھیں بھی اشتعال انگیز ویڈیوز دکھائے۔

TOPPOPULARRECENT