Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / محض آبادی میں اضافہ سے ہندو دھرم کا استحکام ناممکن

محض آبادی میں اضافہ سے ہندو دھرم کا استحکام ناممکن

ہندوؤں کی تعداد بڑھانے بی جے پی قائدین کی وکالت پر شیوسینا کی تنقید

ممبئی 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) شیوسینا نے ہندوؤں کو اپنا مذہب مضبوط بنانے اپنی آبادی اور تعداد میں اضافہ کا مشورہ دینے والے بی جے پی ارکان پارلیمنٹ پر آج سخت تنقید کی اور حکومت کو یاد دلایا کہ آبادی میں اضافہ ہی ہندوستان کی پسماندگی اور پریشانی کا ایک اہم عنصر ہے اور کہاکہ ہندوؤں کی آبادی بڑھانے سے متعلق نظریات کی تائید نہیں کی جاسکتی۔ بی جے پی کے زیرقیادت اتحاد کی ایک اہم ساجھیدار جماعت شیوسینا نے چند ہندو قائدین اور بی جے پی ارکان پارلیمنٹ کی جانب سے ہندوؤں کو چار شادیاں کرنے اور ممکنہ حد تک زیادہ سے زیادہ بچے پیدا کرتے ہوئے مسلمانوں سے سخت مقابلہ کرنے کیلئے کی گئی پرزور وکالت کی مخالفت کی ہے۔ شیوسینا کے ترجمان مرہٹی روزنامہ ’سامنا‘ کے اداریہ میں لکھا گیا ہے کہ اس قسم کے بیانات پر تبصرہ کرنے کے بجائے بی جے پی کے سینئر قائدین یا حکومت کو چاہئے کہ وہ اس مسئلہ پر اپنا موقف واضح کرے۔ محض آبادی میں اضافہ کے ذریعہ کسی مذہب کو مضبوط نہیں کیا جاسکتا‘‘۔

سامنا نے اپنے اداریہ میں مزید لکھا کہ آر ایس ایس کو چاہئے کہ وہ خاندانی منصوبہ بندی قوانین کو مزید سخت بنانے کے لئے حکومت پر دباؤ ڈالے۔ ناسک کے کمبھ میلہ میں وشوا ہندو پریشد کے لیڈر پروین توگاڑیہ کی جانب سے کئے گئے حالیہ ریمارکس کی سخت مذمت کرتے ہوئے شیوسینا نے لکھا کہ ایک طرف چھوٹا اور خوشحال خاندان جیسے نعرے دیئے جارہے ہیں تو دوسری طرف 4-5 بچے پیدا کرنے کی وکالت کی جارہی ہے۔ شیوسینا کے مطابق توگاڑیہ نے کہا تھا کہ ’’ہم ایسے ہندو خاندانوں کیلئے ہیلپ لائن شروع کریں گے جن کو بچے پیدا نہیں ہورہے ہیں۔ ہم ایسے خاندانوں کا علاج کروائیں گے اور چار بچے پیدا کرنے کے لئے حوصلہ افزائی کی جائے گی‘‘۔ سامنا کے اداریہ نے اس قسم کے بیانات کی مذمت کرتے ہوئے مزید لکھا کہ ’’فی الحال ہم ہندوستان کی آبادی میں اضافہ جیسے مسئلہ سے نمٹ رہے ہیں کیوں کہ آبادی میں اضافہ ہی ہمارے ملک کی پریشانیوں کی ایک اہم وجہ ہے۔ آبادی میں اضافہ غربت اور بے روزگاری میں مزید اضافہ کا سبب بن سکتا ہے‘‘۔ واضح رہے کہ بی جے پی کے ایک رکن پارلیمنٹ مہاراج نے اس سال کے اوائل میں ہندوستانی خواتین کو چار بچے پیدا کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے ایک تنازعہ پیدا کردیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT