Tuesday , June 27 2017
Home / شہر کی خبریں / محفل خواتین کا مانو کے اشتراک سے سمینار کا انعقاد

محفل خواتین کا مانو کے اشتراک سے سمینار کا انعقاد

ملک گیر سطح کے سرکردہ مرد و خواتین ، اکابرین کی شرکت و مخاطبت
حیدرآباد ۔ 8 ۔ مارچ : ( راست ) : بین الاقوامی یوم خواتین اور محفل خواتین کے سالانہ جلسہ کے موقع پر مرکز مطالعات مولانا آزاد یونیورسٹی اور محفل خواتین کے اشتراک سے دو روزہ قومی سمینار بعنوان ’ نسائی تہذیب کی جہتیں دکنی زبان و ادب کے حوالے سے ‘ 4 اور 5 مارچ کو مدینہ ایجوکیشن سنٹر نامپلی پر منعقد ہوا ۔ افتتاحی اجلاس میں کوآرڈینٹر ڈاکٹر آمنہ تحسین ڈائرکٹر مطالعہ نسواں نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا ۔ بعد ازاں ادبی میگزین محفل خواتین کی رسم اجراء پروفیسر ایس اے شکور کے ہاتھوں انجام پائی ۔ پروفیسر شکور نے جلسہ کو مخاطب کرتے ہوئے محفل خواتین اور (مانو ) کے اشتراک کی ستائش کی ۔ محترمہ تسنیم جوہر نے محفل خواتین کی کارکردگی اور مقاصد سے واقف کرایا ۔ افتتاحی اجلاس میں صدر جلسہ پروفیسر اشرف رفیع ، مہمان اعزازی پروفیسر فاطمہ پروین ، مہمان خصوصی ڈاکٹر صوفیہ بیگم ، تلنگانہ وقف بورڈ اور کلیدی خطبہ پروفیسر عبدالستار دلوی ڈائرکٹر انجمن اسلام ممبئی نے پیش کیا ۔ اس موقع پر مشہور کراٹے چمپئن سیدہ فلک اور پائیلٹ سلویٰ فاطمہ کو تہنیت پیش کی گئی ۔ پہلے اجلاس میں صدور پروفیسر عقیل ہاشمی حیدرآباد ، پروفیسر نور الدین سعید سابق چیرمین کرناٹک اردو اکیڈیمی بنگلور نے شرکت کی ۔ اس اجلاس میں مقالہ نگار پروفیسر محمد علی اثر ، پروفیسر شمیم ثریا گلبرگہ ، پروفیسر سید سجاد حسین مدراس ، پروفیسر عبدالستار ساحر نیلور ، ڈاکٹر حبیب نثار حیدرآباد ، ڈاکٹر معزہ قاضی ممبئی ، ڈاکٹر رفیعہ سلطانہ حیدرآباد نے اپنے مقالہ جات پیش کئے ۔ ناظم اجلاس ڈاکٹر بی بی رضا خاتون ( مانو ) تھیں ۔ بعد ازاں پروگرام ’ دل سے ‘ ڈھولک کے گیت پیش کئے گئے ، صدارت مجتبیٰ حسین نے کی ۔ مہمان خصوصی پروفیسر ستار ساحر ، مہمان اعزازی محترمہ لکشمی دیوی راج ، محترمہ قمر جمالی تھیں ۔ ناظم اجلاس ثمینہ بیگم ریسرچ اسکالر تھیں ۔ دوسرے اجلاس میں صدور اجلاس پروفیسر فاطمہ پروین اور پروفیسر سید سجاد حسنین مدراس تھے ۔ مقالہ نگار پروفیسر سید خلیل احمد شموگہ ، پروفیسر نسیم الدین فریس ، پروفیسر حلیمہ فردوس بنگلور ، پروفیسر مجید بیدار حیدرآباد ، ڈاکٹر نکہت جہاں ، ڈاکٹر بی بی رضا خاتون ، ڈاکٹر حمیرا سعید محبوب نگر تھے ۔ ناظم اجلاس ڈاکٹر نکہت آراء شاہین تھیں ۔ تیسرے اجلاس میں صدور اجلاس ڈاکٹر مصطفی کمال ایڈیٹر شگوفہ حیدرآباد اور پروفیسر محمد خلیل احمد کوئمبتور یونیورسٹی شموگہ تھے ۔ مقالہ نگار ڈاکٹر نشاط احمد حیدرآباد ، ڈاکٹر بدر سلطانہ ( مانو ) ڈاکٹر حکیم رئیس فاطمہ نے مقالات پیش کئے ۔ ناظم اجلاس ڈاکٹر حمیرا سعید تھیں ۔ چوتھے اجلاس کی صدارت ڈاکٹر اودیش رانی ماہر لسانیات و دکنیات نے کی ۔ مہمان خصوصی پروفیسر حلیمہ فردوس بنگلور ، مہمان اعزازی محترمہ ارجمند نظیر مقبول فنکارہ ڈھولک کے گیت تھیں ۔ اس محفل میں زبانی ادب کی پیشکشی میں محترمہ لکشمی دیوی راج ، محترمہ نسیمہ تراب الحسن ، تسنیم جوہر ، ثریا جبین ، ڈاکٹر نکہت آرا شاہین ، رفیعہ نوشین ، ثمینہ بیگم اور عطیہ مجیب عارفی نے حصہ لیا ۔ ناظم اجلاس محترمہ تسنیم جوہر تھیں ۔ بعد ازاں اختتامی اجلاس کی صدارت پروفیسر بیگ احساس نے کی ۔ مہمان خصوصی علامہ اعجاز فرخ ، مہمانان اعزازی پروفیسر آمنہ کشور ، پروفیسر ویملا ، صدر مکتا حیدرآباد تھے ۔ پروفیسر بیگ احساس نے سمینار کی ستائش کی اور مبارکباد پیش کی ۔ علامہ اعجاز فرخ نے دکنی لب و لہجہ میں مخاطب کر کے محفل کو گرمادیا ۔ ناظم اجلاس ڈاکٹر آمنہ تحسین کوآرڈینٹر سمینار تھیں ۔ تمام مقالہ نگاروں نے ’ نسائی تہذیب کی جہتیں ‘ دکنی زبان و ادب کے حوالے سے ’ عنوان کے تحت بہترین مقالہ جات پیش کئے ۔ ڈاکٹر آمنہ تحسین کوآرڈینٹر کے شکریے پر دو روزہ سمینار کا اختتام عمل میں آیا ۔ اس سمینار میں اساتذہ اور اسکالرس کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ ڈاکٹر آمنہ تحسین اور محفل خواتین کی صدر پروفیسر حبیب ضیا قابل مبارکباد ہیں جن کی محنت ، کوشش اور حسن انتظام نے سمینار کو کامیابی سے ہمکنار کیا ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT