Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / محمد رفیع کے فرزند شاہد رفیع کانگریس میں شامل، مجلس کو خیرباد

محمد رفیع کے فرزند شاہد رفیع کانگریس میں شامل، مجلس کو خیرباد

مہاراشٹرا مجلس کو زبردست دھکہ، راہول گاندھی کی موجودگی میں کئی مجلسی کارکن بھی شامل

ممبئی۔/15جنوری، ( سیاست ڈاٹ کام ) مہاراشٹرا مجلس کے اہم قائد معروف گلوکار محمد رفیع کے فرزند شاہد رفیع نے آج مجلس اتحادالمسلمین سے علحدگی اختیار کرنے کا اعلان کرتے ہوئے راہول گاندھی کی موجودگی میں کانگریس میں شمولیت اختیار کرلی۔ مہاراشٹرا اسمبلی انتخابات کے دوران شاہد رفیع نے حلقہ اسمبلی منبادیوی سے مجلس کے ٹکٹ پر مقابلہ کیا تھا اور مجلس اتحادالمسلمین کی جانب سے شاہد رفیع کو کامیاب بنانے کی کافی محنت کی گئی تھی۔ مہاراشٹرا مجلس کو شاہد رفیع کے کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے سے بڑا دھکہ لگا ہے اور کہا جارہا ہیکہ مہاراشٹرا مجلس میں شمولیت اختیار کرنے والے مسلم قائدین کی کانگریس میں شمولیت کے دور کا یہ آغاز ہے بہت جلد بڑی تعداد میں قائدین کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے کا امکان ہے۔  وزیر اعظم نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج ایک سوال کیا ہے کہ غریبوں کے مسائل پر وہ خاموش کیوں ہیں،

اور یہ ادعا کیا کہ بہت جلد بی جے پی حکومت اپنی ساکھ کھودیگی۔ شمال ممبئی میں سب اربن ملاڈ کے مقام پر پارٹی کارکنوں کی ایک ریالی کو مخاطب کرتے ہوئے راہول نے کہا کہ وزیر اعظم تو بہترین تقاریر کرتے ہیں لیکن غریبوں کو درپیش مسائل پر خاموش رہتے ہیں۔ انہوں نے پارٹی کارکنوں سے کہاکہ باہمی اختلافات فراموش کرکے متحدہ طور پر کام کریں تاکہ کانگریس دوبارہ برسراقتدار لایا جاسکے۔ کانگریس لیڈر نے تلسنکرات کے موقع پر عوام کو مراہٹی زبان میں مبارکباد دی اور پارٹی لیڈروں سے اپیل کی کہ گروہ بندیوں سے باز آجائیں ۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی حکومت کا اعتبار دو تین سال میں متزلزل ہوجاتا ہے لیکن بی جے پی حکومت کا بہت جلد بھرم ٹوٹنے والا ہے۔انہوں نے بتایا کہ ان دنوں صنعتی ترقی اور بیرونی سرمایہ کاری کے چرچے ہیں

جو کہ بہت اچھی بات ہے لیکن ملک میں غریب لوگ اور محنت کش بھی رہتے ہیں جنہیں حکومت نے یکسر فراموش کردیا ہے۔ ستم ظریفی یہ ہے کہ مصائب و آلام سے دوچار کسانوں کی حالت ابتر ہوگئی ہے جبکہ غریبوں اور ہاکرس کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ راہول گاندھی نے طنزیہ انداز میں کہا کہ نریندر مودی’ کلین انڈیا ‘ کی بات کرتے ہیں اور ان کے وزراء جھاڑو لیکر سڑکوں کی صفائی کررہے ہیں لیکن شہر ممبئی میں کوڑا کرکٹ کا ڈھیر لگاہوا ہے، صرف تقاریر اور میڈیا میں تشہیر کے ذریعہ صفائی نہیں کی جاسکتی۔ انہوں نے یہ انکشاف کیا کہ اترپردیش میں کئی لوگوں نے کلین انڈیا مشن کے تحت تعمیر کردہ بیت الخلاؤں کو منہدم کردیا ہے۔ راہول گاندھی نے کہا کہ بربن ممبئی میونسپل کارپوریشن کا بجٹ ہزارہا کروڑ کا ہے لیکن حکومت اسمارٹ سٹی ممبئی کیلئے صرف 100کروڑ روپئے فراہم کررہی ہے اور جب کانگریس اقتدار میں تھی اسوقت ناندیڑ جیسے شہر کو 2,000 کروڑ روپئے مختص کئے تھے۔ اگر شہر ممبئی کو پھر ایک بار خوبصورت اور ترقی یافتہ بنانا ہے تو میئر کے عہدہ کیلئے کانگریس امیدوار کو کامیاب بنانے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ کانگریس کی کامیابی کا پہلا زینہ ممبئی ہوگا اور اس کے بعد ریاست اور پھر مرکز میں حکومت تشکیل دی جائے گی۔ راہول گاندھی نے بتایا کہ شہر میں کل پدیاترا کے دوران غریبوں کے برقی شرحوں پر نظر ثانی کیلئے حکومت پر دباؤ ڈالا جائے گا۔ اس موقع پر راہول گاندھی نے مرحوم گلوکار محمد رفیع کے فرزند شاہد رفیع کی کانگریس میں شمولیت کا اعلان کیا جبکہ ریالی سے مخاطب کرتے ہوئے مہاراشٹرا پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر سنجے نروپم نے کہا کہ ممبئی اور مہاراشٹرا سے بی جے پی ۔ شیوسینا حکومت کو بیدخل کرنے تک جدوجہد جاری رہے گی۔علاوہ ازیں سابق چیف منسٹر اشوک چوہان اے آئی سی سی جنرل سکریٹری مکل واسنک اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر رادھا کرشنا پاٹل نے بھی مخاطب کیا۔

TOPPOPULARRECENT