Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / محمد غوث جیل سے رہا، جدوجہد جاری رکھنے کا عہد

محمد غوث جیل سے رہا، جدوجہد جاری رکھنے کا عہد

ٹی آر ایس حکومت ہمیں خوف زدہ نہیں کرسکتی ، کانگریس لیڈر کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔ 5 اگسٹ (سیاست نیوز )  جنگ جاری رہے گی اور جنگ میں شدت پیدا ہوگی اس طرح عوام کی آواز کو دبانے کیلئے خوفزدہ نہیں کیا جا سکتا ۔ تلنگانہ راشٹرا سمیتی اور اس کی حلیف جماعتیں حقوق کی جودجہد کرنے والوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ چیف منسٹر کے سی آر تلنگانہ مخالف سرگرمیوں میں ملوث دلالی کرنے والے رکن پارلیمنٹ کو ساتھ رکھے ہوئے ہیں۔ لگڑاپاٹی راجگوپال کے ساتھ مل کر تشکیل تلنگانہ میں رکاوٹ پیدا کرنے والے ٹی آر ایس کے دوست بنے ہوئے ہیں۔ جناب محمد غوث کانگریسی قائد و سابق کارپوریٹر نے آج چنچل گوڑہ جیل سے رہائی کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کے دوران یہ بات کہی ۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست تلنگانہ میں حکومت نے مسلمانوں سے جو تحفظات کا وعدہ کیا ہے اسے پورا کرنے تک حکومت کے خلاف جدوجہد جاری رہے گی۔ 12فیصد تحفظات کی تحریک کے علاوہ دیگر مظلوم طبقات با لخصوص دلتوں کے ساتھ انصاف کیلئے تحریک میں شدت پیدا کی جائے گی۔ انہوں نے قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل جناب محمد علی شبیر کی جانب سے رہائی کیلئے کی گئی کوششوں پر اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ جناب محمد علی شبیر نے اعلی پولیس عہدیداروں سے ربط قائم کرتے ہوئے صورتحال سے آگہی حاصل کی اور جیل میں ان سے ملاقات کی۔محمد  غوث رہائی کے بعد سیدھے درگاہ حضرت یوسفینؒ نامپلی پہنچے اور حاضری دیتے ہوئے فاتحہ خوانی کی۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ جناب طاہر عفاری ‘ محمد فرید کے علاوہ دیگر کانگریسی قائدین موجود تھے۔ محمد غوث نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ انہیں جس مقدمہ میں گرفتار کیا گیا وہ مقدمہ شواہد کی عدم موجودگی کی بناء پر بند کیا جا چکا ہے۔ انہوں نے مجلسی قیادت کو ایک مرتبہ پھر سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مرکز میں بی جے پی اور ریاست میں ٹی آر ایس کے ساتھ رہتے ہوئے مسلم مسائل با لخصوص 12فیصد تحفظات کے مسئلہ پر خاموش رہنے والی قیادت سے اب عوام جگہ جگہ یہ سوال کریں گے کہ وہ کیوں مسلم تحفظات پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں؟ انہوں نے گرفتاری کے بعد پیدا شدہ حالات میں حوصلہ افزائی کرنے والوں سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ اللہ اور اس کے رسولﷺ کے علاوہ اولیاء اللہ کے صدقہ و طفیل میں آج ان کی رہائی عمل میں آئی ہے۔ انہوں نے جناب مظفر اللہ خان شفاعت وکیل دفاع کا بھی شکریہ ادا کیا ۔ واضح رہے کہ تیسرے ایڈیشنل میٹرو پولیٹن سیشنس جج نامپلی کورٹ نے کل محمد غوث کی ضمانت منظور کرتے ہوئے پانچ ہزار کے دو مچلکے جمع کرنے پر جیل سے رہائی کا حکم دیا تھا ۔ ضابطہ کی کارروائی مکمل کرنے کے بعد آج سابق کارپوریٹر کی چنچل گوڑہ جیل سے رہائی عمل میں آئی ۔

TOPPOPULARRECENT