Thursday , September 21 2017
Home / جرائم و حادثات / محمد پہلوان کے بھتیجے کےخلاف فرضی مقدمہ

محمد پہلوان کے بھتیجے کےخلاف فرضی مقدمہ

حیدرآباد ۔ 20 اگسٹ( سیاست نیوز) عدالت میں انصاف حاصل کرنے میں کامیاب ہونا ناقابل برداشت ہوگیا ہے اور پولیس مشنری کے ذریعہ محمد پہلوان کے ارکان خاندان کو ہراساں کرنے کا سلسلہ شروع ہوگیا ۔ ایک تازہ ترین واقعہ میں پولیس چندرائن گٹہ نے یحی بن یونس یافعی جو محمد پہلوان کے بھتیجے ہیں کے خلاف ایک نوجوان پر حملہ کرنے ایک فرضی مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ سلمان با مسعود نامی نوجوان نے پولیس چندرائن گٹہ میں یہ شکایت درج کروائی تھی کہ زبیر عفاری ‘ عمار باوزیر ‘ براہیم باوزیر اور یحیی یافعی نے اس پر حملہ کر کے زخمی کر دیا ۔ پولیس چندرائن گٹہ نے اس سلسلہ میں فی الفور کارروائی کرتے ہوئے نوجوانوں کے تعزیرات ہند کے دفعات 324 اور 506 کے تحت ایک مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ محمد پہلوان کے ارکان خاندان نے یہ الزام عائد کیا کہ اس قسم کے مقدمات درج کرتے ہوئے انہیں خوفزدہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے اور جبکہ اس حملہ میں یحی یافعی کا کوئی رول نہیں ہے ۔ واضح رہے کہ 29 جون کو 7 ویں ایڈیشنل میٹرو پولٹین سیشن حج نے چندرائن گٹہ حملہ کیس میں 10ملزمین جس میں یحیی یافعی بھی شامل ہیں کو باعزت بری کر دیا تھا اور رہائی کے بعد مکان پہنچنے پر ساوتھ پولیں محمد پہلوان کے مکان پہنچ کر انہیں دھمکانے کی بھی مبینہ کوشش کی تھی ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT