Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / محکمہ آبرسانی کو خود مکتفی بنانے پر زور

محکمہ آبرسانی کو خود مکتفی بنانے پر زور

بورڈ کی کارکردگی میں مزید بہتری سے آمدنی متوقع ، کے ٹی راما راؤ
حیدرآباد ۔ 23 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : وزیر بلدی نظم و نسق و انفارمیشن ٹکنالوجی مسٹر کے ٹی راما راؤ نے حیدرآباد میٹرو واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کو خود مکتفی بنانے کے لیے ہر ملازم پر زور دیا کہ وہ ایچ ایم ڈبلیو ایس ایس بی کی کارکردگی کو مزید فعال بنانے کے اقدامات کریں تاکہ حکومت کے لیے حیدرآباد میٹرو پولیٹن واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ ایک اثاثہ ثابت ہوسکے ۔ مسٹر کے ٹی راما راؤ نے آج یہاں حیدرآباد میٹرو پولیٹن واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ آفس میں تمام عہدیداران ایچ ایم ڈبلیو ایس ایس بی کے ہمراہ ایک اجلاس طلب کر کے حیدرآباد میٹرو واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کی کارکردگی کا تفصیلی جائزہ لیا ۔ اس دوران مسٹر کے ٹی راما راؤ نے عہدیداران و ملازمین ایچ ایم ڈبلیو ایس ایس بی سے کہا کہ حیدرآباد میٹرو واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کی کارکردگی میں مزید بہتری پیدا کر کے آمدنی میں اضافہ کر کے اس بورڈ کو خود مکتفی بنانے کے اقدامات کریں ۔ وزیر بلدی نظم و نسق نے اپنا اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی حکومت کے لیے مکمل طور پر کسی ادارہ کا مالی بوجھ برداشت کرنا ممکن نہیں ہوسکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ بورڈ کی ترقی و آمدنی میں اضافہ کرنے کے لیے اقدامات کرنے والے عہدیداروں و ملازمین کے لیے ترغیبات دئیے جائیں گے ۔ علاوہ امیں مسٹر کے ٹی راما راؤ نے سیوریج ورکرس کو مکمل تحفظ فراہم کرنے پر اولین ترجیح دی جائے گی ۔ وزیر موصوف نے عہدیداروں پر زور دیا کہ سیوریج کی صفائی ( کلیننگ ) کے کاموں میں سیفٹی ( حفاظتی ) مینجمنٹ وغیرہ کی مکمل سہولتیں فراہم کریں ۔ علاوہ ازیں حیدرآباد میٹرو واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کو واجب الادا بقایا جات کے حصول پر اپنی اولین ترجیح دینے کی عہدیداروں کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن حدود میں نلوں کے کنکشن کی تعداد میں بھی اضافہ کے لیے موثر اقدامات کریں ۔ وزیر بلدی نظم و نسق نے مزید بتایا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن حدود میں صرف ایک لاکھ مکانات میں پائے جانے والے نل کے کنکشنوں کو واٹر میٹر پائے جاتے ہیں ۔ لہذا بہت جلد نل کے میٹروں کی تنصیب کے لیے ایک خصوصی مہم چلائی جانی چاہئے ۔ مسٹر کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن حدود میں صرف 32 ہزار کمرشیل نل کنکشن پائے جاتے ہیں اور اگر اس پر خصوصی توجہ دی جائے تو نہ صرف کمرشیل نل کنکشن کی تعداد میں اضافہ ہوگا بلکہ گھریلو نل کے کنکشن کی تعداد میں زبردست اضافہ ہوسکے گا ۔ اس طرح نل کنکشنوں کی تعداد میں اضافہ ہونے کی صورت میں حیدرآباد میٹرو واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کی آمدنی میں بھی زبردست اضافہ ہوگا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پانی کو آلودہ ہونے نہیں دینا چاہئے ۔ پانی کے آلودہ ہونے کے باعث بعض ناخوشگوار واقعات پیش آسکتے ہیں ۔ بالخصوص آئندہ شہر حیدرآباد میں گذشتہ عرصہ کے دوران بھولکپور مشیر آباد میں پیش آئے واقعات کا ہرگز اعادہ نہیں ہونا چاہئے ۔ ضرورت پڑنے پر واٹر ٹسٹنگ لیابس قائم کئے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ چھ ماہ میں حیدرآباد میٹرو واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کی کارکردگی میں بہتری کے ذریعہ اچھے نتائج حاصل ہوں گے ۔۔

حیدرآباد ۔ 23 ۔ جولائی : ( راست ) :

TOPPOPULARRECENT