Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / محکمہ اقلیتی بہبود سے 100 امیدواروں کو سیول سروسیس کی کوچنگ

محکمہ اقلیتی بہبود سے 100 امیدواروں کو سیول سروسیس کی کوچنگ

15 جولائی تک کوچنگ سنٹرس میں داخلے ، حکومت سے فیس کی ادائیگی
حیدرآباد۔6 جولائی (سیاست نیوز) تلنگانہ میں جاریہ سال سیول سرویس امتحانات کی کوچنگ کے لیے محکمہ اقلیتی بہبود 100 اقلیتی طلبہ کا انتخاب کیا ہے توقع ہے کہ 15 جولائی سے نامور کوچنگ سنٹرس میں طلباء کے داخلوں کا عمل مکمل ہوجائے گا۔ حکومت نے سرکاری خرچ پر اقلیتی طلباء کو سیول سرویسس کی کوچنگ فراہم کرنے کی اسکیم گزشتہ سال سے متعارف کی ہے۔ پہلے سال 88 اقلیتی طلباء میں 3 اسٹیڈی سنٹرس میں کوچنگ حاصل کی تھی۔ اقلیتوں کو سیول سرویسس کی کوچنگ فراہم کرنے کے سلسلہ میں حکومت کے مشیر برائے اقلیتی امور اے کے خان خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں۔ انہوں نے سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل سے مشاورت کے بعد جاریہ سال کوچنگ سنٹرس کی تعداد میں اضافے کا فیصلہ کیا ہے۔ موجودہ 3 کوچنگ سنٹرس کے علاوہ مزید 3 خانگی نامور اداروں کو اس فہرست میں شامل کیا جاسکتا ہے۔ اس سلسلہ میں سفارشات پیش کرنے کے لیے تین رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی جس میں راہول بوجا آئی اے ایس اور آئی پی ایس عہدیداران شاہنواز قاسم اور جیول ڈیوڈ شامل ہیں۔ یہ کمیٹی توقع ہے کہ اندرون ایک ہفتہ اپنی رپورٹ پیش کردے گی۔ گزشتہ سال جن تین خانگی کوچنگ سنٹرس میں اقلیتی طلباء نے داخلہ لیا تھا ان میں حیدرآباد اسٹیڈی سرکل آر سی ریڈی اور برین ٹری شامل ہیں۔ اے کے خان نے بتایا کہ ایسے اقلیتی طلباء جو سیول سرویسس کوچنگ کے لیے ٹاپ 100 میں منتخب قرار دیئے گئے ہیں انہیں اس بات کا اختیار حاصل رہے گا کہ وہ اپنی پسند کے خانگی ادارے میں داخلہ حاصل کریں۔ کوچنگ کی مکمل فیس حکومت کی جانب سے ادا کی جائے گی۔ سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف مینارٹیز عثمانیہ یونیورسٹی نے ٹاپ 10 طلباء کے انتخاب کے لیے اسکریننگ ٹسٹ منعقد کیا تھا جس میں 329 اقلیتی طلباء نے حصہ لیا۔ حیدرآباد سے 189 امیدوار اسکریننگ ٹسٹ میں شریک تھے۔ ادارے کی جانب سے اسکریننگ ٹسٹ کے نتائج کا اعلان کردیا گیا ہے۔ نئے خانگی کوچنگ سنٹرس کے اضافے سے توقع کی جارہی ہے کہ سیول سرویسس کے نتائج میں اقلیتی امیدواروں کا بہتر مظاہرہ رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT