Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / محکمہ انکم ٹیکس کی عنقریب7لاکھ نوٹسوں کی اجرائی

محکمہ انکم ٹیکس کی عنقریب7لاکھ نوٹسوں کی اجرائی

احمد آباد۔/22جولائی، ( سیاست ڈاٹ کام )حکومت نے ٹیکس دہندگان پر بقایا جات ادا کرنے کیلئے دباؤ بڑھادیا ہے۔ انکم ٹیکس محکمہ بہت جلد 7لاکھ نوٹسیں جاری کرنے کا بیڑہ اٹھایا ہے تاکہ جائیدادوں کی خرید و فروخت میں استعمال بھاری رقومات کی تفصیلات حاصل کی جاسکیں کیونکہ رئیل اسٹیٹ کے شعبہ میں سب سے زیادہ ٹیکس ادا کرنے سے گریز کیا جاتا ہے۔ باور کیا جاتا ہے کہ یہ اقدام تنخواہ یافتہ، پیشہ ور افراد اور تاجرین کو انکم ٹیکس ڈیکلریشن اسکیم کے تحت رضاکارانہ طور پر اپنی پوشیدہ آمدنی کا اعلان کرنے کیلئے اٹھایا گیا ہے اور بلیک منی کا افشاء کرتے ہوئے ٹیکس رعایت حاصل کرنے کی ترغیب دی جاسکے۔ جبکہ 10لاکھ یا اس سے زائد رقم بینک کھاتے میں محفوظ ( سیوینگ ) کروانے، 30 لاکھ یا اس سے زائد مالیاتی غیر منقولہ جائیداد کی فروخت پر انکم ٹیکس کا اطلاق ہوگا۔ ممبئی میں انکم ٹیکس کو جو کہ ملک بھر میں ایک تہائی راست ٹیکس وصول کرتا ہے، رئیل اسٹیٹ بروکرس، پراپرٹی رجسٹرارس اور دیگر اداروں کی جانب سے سالانہ انکم ریٹرنس داخل کئے جانے کے بعد 2 لاکھ نوٹس جاری کرے گا۔ مسٹر ڈی کے سکسینہ پرنسپال چیف کمشنر انکم ٹیکس ممبئی نے یہ اطلاع دی ہے اور بتایا کہ بے نامی جائیدادوں کا پتہ چلانے کی کوششوں میں سرعت پیدا کردی ہے تاکہ ٹیکس کی ادائیگی سے گریز کرنے والوں پر قانونی شکنجہ کسا جائے۔

TOPPOPULARRECENT