Saturday , August 19 2017
Home / سیاسیات / مخلوط حکومت سے دستبرداری سے انکار، بی جے پی پر ادھو ٹھاکرے کی دوبارہ تنقید

مخلوط حکومت سے دستبرداری سے انکار، بی جے پی پر ادھو ٹھاکرے کی دوبارہ تنقید

ممبئی ۔ 22 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر شیوسینا ادھوٹھاکرے آج مخلوط حکومت کی اپنی ساتھی سیاسی پارٹی بی جے پی پر پاکستان، بڑا گوشت، رام مندر اور افراط زر کے مسائل پر شدید تنقید کی۔ تاہم مخلوط حکومت سے دستبرداری سے انکار کردیا۔ وہ دادر میں دسہرہ جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے جو ہر سال شیوسینا کی جانب سے منعقد کیا جاتا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ملک کو ہندو راشٹر قرار دیا جائے اور یکساں سیول کوڈ نافذ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جب حکومتیں پیاز کی قیمتوں پر اقتدار سے بیدخل ہوسکتی ہیں تو دالوں کی قیمتیں آسمان چھونے پر کیوں نہیں ہوسکتیں۔ ادھو ٹھاکرے نے مرکزی وزراء وی کے سنگھ کے دلت بچوں کی ہلاکت کے بارے میں تبصرے اور کرن رجیجو پر شمالی ہندوستانیوں کے بارے میں تبصرہ پر سخت تنقید کی۔ انہوں نے کہا کہ حوالدار عبدالحمید ایک سورما، ایک سپاہی ، دھرتی کا لال تھے جنہوں نے کشمیر کو پاکستانی فوج سے بچایا تھا۔ وہ ان کی خبر پر اپنا سر جھکانے تیار ہیں لیکن ایم آئی ایم قائد اویسی نے اورنگ زیب کی اپنا سر جھکایا تھا جو ہمارے لئے باعث شرم ہے۔

TOPPOPULARRECENT