Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / مدر ٹریسا کی خدمات ۔ عیسائیت کی سازش کا حصہ

مدر ٹریسا کی خدمات ۔ عیسائیت کی سازش کا حصہ

رام مندر کی تعمیر روکنا ممکن نہیں ، یوگی آدتیہ ناتھ کا ریمارک
بستی ( اترپردیش ) ۔ 20 ۔ جون : (سیاست ڈاٹ کام ) : ایک متنازعہ ریمارک میں بی جے پی رکن پارلیمنٹ یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ نوبل انعام یافتہ مدر ٹریسا ، ہندوستان کو عیسائیت میں تبدیل کرنے کی سازش کا ایک حصہ تھیں اور عیسائیت کی ترویج اور تبلیغ کے نتیجہ میں شمال مشرقی ریاستوں بشمول اروناچل پردیش ، تریپوری ، میگھالیہ اور ناگالینڈ میں علحدگی پسند تحریکیں شروع ہوگئی تھیں ۔ انہوں نے یہاں رام کتھا پروگرام سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تم لوگ شمال مشرق کی صورتحال سے واقف نہیں ہو ۔ آپ وہاں کا دورہ کر کے حقیقی حالات کا مشاہدہ کریں ۔ گذشتہ سال بھی آر ایس ایس سربراہ موہن بھگوت نے اس طرح کے ریمارکس میں کہا تھا کہ غریبوں کے لیے مدر ٹریسا کی خدمت کا مقصد عیسائیت میں داخل کرنا ہے ۔ ایودھیا میں رام مندر کے مسئلہ پر یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ اس کی تعمیر سے کوئی روک نہیں سکتا ۔ انہوں نے چیلنج کیا کہ بابری مسجد کے انہدام سے کوئی روک نہیں سکا تو مندر کی تعمیر سے کوئی کیسے روک سکتا ہے ۔ کیرانہ قصبہ سے ہندوؤں کی نقل مکانی کے الزامات پر انہوں نے کہا کہ ہم بھی پاکستان ، بنگلہ دیش اور افغانستان تخلیہ کے لیے زبردستی کرسکتے ہیں اور اس وقت عدم تحمل کا مسئلہ اٹھانے والا کوئی نہیں ہوگا ۔ بی جے پی لیڈر نے کیرانہ سے ہندوؤں کے نقلی مکانی کو نقلی سیکولرازم اور ایک مخصوص فرقہ کی دلجوئی کا نتیجہ قرار دیا ۔ اور یہ الزام عائد کیا کہ کیرانہ علاقہ ہندوؤں کی آبادی 68 فیصد سے گھٹ کر 8 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT