Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / مدھیہ پردیش میں احتجاجی کسانوں پر پولیس فائرنگ، 5 ہلاک

مدھیہ پردیش میں احتجاجی کسانوں پر پولیس فائرنگ، 5 ہلاک

کانگریس کا ہلاکتوں کیخلاف آج بند ، مفرورکاشت کارقائدین کی اطلاع پر انعام ،مہلوکین کے ورثا کو امداد کا اعلان
بھوپال۔ 6 جون (سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش کے ضلع منڈسور میں آج کسانوں کے پرتشدد احتجاج میں کم از کم 5 افراد ہلاک ہوگئے جس کی وجہ سے عہدیداروں نے گڑبڑ زدہ علاقہ میں کرفیو نافذ کردیا۔ کانگریس نے کل ہلاکتوں کے خلاف ریاست گیر بند کا اعلان کیا ہے۔ مدھیہ پردیش کانگریس کمیٹی اور راشٹریہ کسان منچ نے ریاست گیر سطح پر بند کی اپیل کی۔ صدر پردیش کانگریس ارون یادو نے پی ٹی آئی سے بات چیت کے دوران بند کا اعلان کیا۔ منڈسور کے کلکٹر ایس کے سنگھ نے پانچ ہلاکتوں کی توثیق کرتے ہوئے کہا کہ مجسٹریٹ کی جانب سے تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے جبکہ کشیدگی برقرار ہے، موبائیل انٹرنیٹ خدمات منڈسور رتلام اور نیمچھ میں معطل کردی گئی ہیں تاکہ افواہوں کے پھیلنے کو روکا جاسکے۔ کلکٹر نے پی ٹی آئی سے کہا کہ پولیس کی جانب سے احتجاجیوں پر فائرنگ نہیں کی گئی۔ پپلیا منڈی پولیس اسٹیشن حدود میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے۔ دیگر علاقوں میں دفعہ 144 نافذ ہے۔

مہلوکین کی نعشوں کا پوسٹ مارٹم جاری ہے۔ ہلاکتوں کی وجہ بعدازاں معلوم ہوگی۔ چیف منسٹر شیوراج سنگھ چوہان نے مہلوکین کے ورثا 10 لاکھ روپئے کی مالی امداد کا اعلان کیا ہے اور اپنے ٹوئٹر پر کانگریس پر تشدد کا الزام عائد کرتے ہوئے کاشت کاروں سے صبر و تحمل برتنے اور کسی کے پھندے میں نہ پھنسنے کا اعلان کرتے ہوئے تیقن دیا کہ تمام مسائل کی بات چیت کے ذریعہ یکسوئی کرلی جائے گی۔ رتلام میں کلکٹر اور سپرنٹنڈنٹ پولیس نے مفرور کاشت کار قائدین کی گرفتاری کی وجہ بننے والی اطلاع دینے والوں کو 10 ہزار روپئے انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔ سینئر کانگریس قائد جیوتر آدتیہ سندھیا نے بھی واقعہ کی مذمت کی ۔ اندور میں کاشت کاروں کو جلوس کے دوران سنگباری کے بعد پولیس لاٹھی چارج پر مجبور ہوگئی۔ دھار میں اندور ۔ احمدآباد قومی شاہراہ کی تین گھنٹے ناکہ بندی کی گئی۔  صدر ایم پی پٹی دار سماج مہیندر پٹی دار نے کہا کہ مہلوکین کی نعشوں کو چیف منسٹر کی موجودگی میں ہی نذرآتش کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT