Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / مذہبی امن رواداری پر ہند ۔ عراق اقدار میں یکسانیت

مذہبی امن رواداری پر ہند ۔ عراق اقدار میں یکسانیت

عراق میں خونریزی کی ذمہ دار داعش سے ہندوستان کو بھی خطرہ لاحق : شیخ عبدالمہدی الکربلائی
عامر علی خاں
کربلا ۔ /14 فبروری ۔ عراقی شہر کربلائے معلیٰ میں نواسہ رسولؐ حضرت امام حسینؓ کے روضہ مبارک کے امور و انتظامات کے نگراں بورڈ کے سربراہ اعلیٰ شیخ عبدالمہدی الکربلائی نے اپنے اس احساسات کا اظہار کیا کہ عفو درگذر ایثار  قربانی و رواداری جیسے اعلیٰ انسانی اقدار کے معاملہ میں عراق و ہندوستان کے نظریات میں یکسانیت ہے ۔ ان دونوں ممالک میں صدیوں سے ان اعلیٰ اقدار پر عمل کیا جاتا رہا ہے ۔ لیکن بدقسمتی سے ایک دہشت گرد گروپ گزشتہ چند سال سے اپنی انسانی دشمن سرگرمیوں کے ذریعہ پرامن عراقی عوام کو قتل و غارت گری کا نشانہ بنارہا ہے ۔ شیخ عبدالمہدی الکربلائی یہاں ہندوستانی صحافیوں کے 17 رکنی وفد سے بات چیت کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ عراق میں سنی اور شیعہ مسلمانوں کے درمیان کوئی تصادم نہیں ہے ۔ انہوں نے علاقائی و عالمی امن کیلئے دہشت گرد تنظیم داعش کو سب سے بڑا خطرہ قرار دیا اور کہا کہ اس تنظیم نے عراق میں نہ صرف مسلکی نفاق و انتشار پیدا کیا بلکہ بڑے پیمانے پر قتل و غارت گری کی ۔ داعش نے نہ صرف اکثریتی شیعہ مسلمانوں کا قتل عام کیا بلکہ سنی و دیگر فرقہ کے مسلم بھائیوں کے علاوہ عیسائیوں اور چھوٹی سی اقلیت یزیدیوں کا بھی انتہائی بے رحمی سے خون بہایا ۔

شیخ عبدالمہدی الکربلائی نے انکشاف کیا کہ داعش کے پیچھے ایک بڑی طاقت کارفرما ہے ۔ جو اس کو مالی ، عسکری اور اخلاقی مدد فراہم کررہی ہے ۔ جس کے نتیجہ میں یہ فتنہ عراق و شام سے پھیل کر سارے عالم عرب اور ساری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے ۔ عراقی شیعہ عالم دین نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ داعش میں 80 سے زائد ممالک کے دہشت گرد اور مذہبی انتہاء پسند سرگرم ہیں ان میں ممکن ہے کہ چند ہندوستانی نوجوان بھی شامل ہوں گے ۔ چنانچہ ہندوستان کی یہ ذمہ داری ہے کہ اپنے نوجوانوں کو داعش کے گمراہ کن پروپگنڈہ سے محفوط رکھتے ہوئے اس خطرناک فتنہ کو اپنے ملک میں پھیلنے سے روکیں ۔ جس طرح عراق نے اپنے نوجوانوں کو اس فتنہ سے بچانے کی مہم میں کامیابی حاصل کی ہے ۔ عراقی سکیورٹی فورسیس کے سابق ڈائرکٹر اور روضہ کے انتظامی بورڈ کے رکن سید افضل شامی نے بھی ہندوستانی صحافیوں کو عراق میں داعش کے فتنہ قتل و غارت گری کے واقعات سے واقف کروایا ۔ انہوں نے دونوں ملکوں کے باہمی تعلقات اور تازہ ترین صورتحال پر بھی گفت و شنید کی ۔ سید افضل الشامی کو ہندوستانی صحافیوں کے گروپ کی جانب سے شال پیش کی گئی ۔صحافیوں کے وفد کو روضہ حضرت امام حسینؓ اور روضہ حضرت عباسؓ کی زیارت بھی کروائی گئی ۔ جمعرات کو ان روضوں پر زائرین کی کثیر تعداد دیکھی گئی  اور قریبی بازاروں میں خوب چہل پہل نظر آئی ۔ مقامی عوام پورے عزم و اعتماد کے ساتھ پرسکون انداز میں معمول کی زندگی گزارتے ہوئے دیکھے گئے ۔

TOPPOPULARRECENT