Tuesday , August 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مذہبی منافرت پھیلانے کی مذمت

مذہبی منافرت پھیلانے کی مذمت

دیگلور /7 جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) دیگلور میں جمیع تاجرین ، شہریان نے شدید احتجاج کرتے ہوئے گستاخ رسول ﷺ کملیش تیواری ( اترپردیش ) کے خلاف تعزرات ہند کی دفعات کے تحت سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ ایک عظیم الشان احتجاجی ریالی ڈیویژن آفس دیگلور کیلئے نکالی گئی ۔جس کی قیادت ممتاز قانون دان نوجوان قائد ایڈوکیٹ قاضی سید پرویز نے کی ۔ ریالی سے خطاب کے دوران ایڈوکیٹ پرویز نے کہا کہ ملک میں کہیں بھی تخریب کاری ہو یا دنیا کے کسی ملک میں دہشت گردی برسر اقتدار زعفرانی جماعتوں کے نام نہاد ذمہ دار بے لگام بیانات جاری کرکے ، تقاریر کرکے عرصہ دراز سے ہمارے ملک میں قائم گنگا جمنی تہذیب کو ختم کرنے اور ملک میں ہر جگہ فسادات کروانے کے درپہ ہیں ۔ اس لئے تمام مسلمانان دیگلور ایسے نام نہاد زعفرانی دہشت گردوں کے سیاسی مذہبی منافرت پھیلانے والے بیانات کی مذمت کرتے ہیں کہا جس پر کئی فلک شگاف قومی نعرہ تمام شریک جلوس مسلمانوں نے بلند کرکے اپنی حب الوطنی کا ثبوت دیا ہے ۔ ایک عظیم الشان تاریخی ریالی محلہ گبند سے نکالی گئی جو جامع مسجد سے ہوتے ہوئے شہر کی مختلف شاہراہوں میں گشت کرتے ہوئے اسسٹنٹ کلکٹر آفس دیگلور پر دوپہر پہنوچی جہاں دو گھنٹے تک پرامن پیمانے پر سارے مسلمان بھائی روڈ پر احتجاج کرتے ہوئے بیٹھ گئے ۔ ایک میمورنڈم اسسٹنٹ کلکٹر دیگلور کو پیش کیا گیا ۔ جہاں پر متعینہ عہدیدار نے اس میمورنڈم کو قبول کرتے ہوئے حکومت تک بات پہونچانے کا تیقن دیا ۔ جس کے بعد ایڈوکیٹ قاضی سید پرویز کے اظہار تشکر پر یہ جلوس پرامن طور پر ختم ہوا ۔ تمام مسلمان بیوپاری ، تاجرین دوکانات نے اپنی اپنی دوکانات کاروبار بند رکھ کر پرامن طور پر کامیاب احتجاج کیا اور جلوس میں ہزارہا لوگوں نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT