Thursday , October 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مذہب اسلام میں امن و یکجہتی کا پیغام

مذہب اسلام میں امن و یکجہتی کا پیغام

دہے گاؤں میں مسجد کی افتتاحی تقریب سے مقررین کا خطاب
کاغذ نگر۔/19مارچ، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) کاغذ نگر مستقر سے 30کلو میٹر کی دوری پر موجود قدیم گاؤں جو کہ دہے گاؤں کے نام سے مشہور ہے، اس گاؤں میں نماز کی ادائیگی کیلئے مسجد نہ رہنے کی وجہ سے سرکاری ملازمین اور گاؤں والوں کو کافی دشواریاں ہورہی تھیں۔ اس لئے کچھ مسلم اقلیتی ہمدرد انسان کی جانب سے اور دہے گاؤں کے اسسٹنٹ سب انسپکٹر آف پولیس محمد سراج احمد کی جدوجہد اور کاوشوں کی بدولت دہے گاؤں کے سابق زیڈ پی ٹی سی مسٹر ستیہ نارائن نے اپنے والدرتنیا کے نام پر مسجد کے تعمیراتی کاموں کیلئے ایک گنٹہ اراضی وقف کردی گئی اور کچھ مسلم دانشوروں اور اسلام کا جدبہ رکھنے والے حضرات کے تعاون کے ذریعہ مسجد محمدیہ دہے گاؤں کے تعمیراتی کاموں کو مکمل کرلیا گیا اور 10مارچ کو بعد نماز جمعہ افتتاحی تقریب منعقد کی گئی جس میںحیدرآباد سے تشریف لائے ہوئے ہائی کورٹ کے سینئر ایڈوکیٹ ایم اے باری، اور ہائی کورٹ ایڈوکیٹ محمد اجمل احمد نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی۔ مقامی مہمانوں میں سرپور ٹاؤن کے سینئر ایڈوکیٹ محمد غلام احمد، مفتی محمد رفیق قاسمی، مولانا محمد رضا، اسسٹنٹ سب انسپکٹر پولیس محمد سراج احمد، کنٹراکٹر محمد سراج، محمد سلطان کاغذ نگر منڈل پریشد معاون رکن محمد صدیق، وظیفہ یاب تحصیلدار خورشید عالم، سابق زیڈ پی ٹی سی ستیہ نارائن اور ان کے بھائیوں کے علاوہ غیر مسلم افراد کی کثیر تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر سرپور ٹاؤن سینئر ایڈوکیٹ محمد غلام احمد اور ہائی کورٹ سینئر ایڈوکیٹ ایم اے باری نے کہا کہ مذہب اسلام امن کا پیغام دیتا ہے یہ زبردستی یا ظلم کے ذریعہ آگے نہیں بڑھا بلکہ پیار اور محبت کے ذریعہ سارے ہندوستان میں اسلام پھیلا۔ آج بھی غیر مسلم بھائیوں کی محبت کی بدولت سارے ہندوستان میں بے چینی کا ماحول ہے۔ انہوں نے اس موقع پر دہے گاؤں میں مسجد محمدیہ کے تعمیر کرنے کیلئے مفت میں اراضی دینے والے جناب ستیہ نارائن اور ان کے بھائیوں کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ آج بھی ایسی فیملی کی بدولت سارے ہندوستان میں مسلم ہندو اتحاد کے نعرے لگائے جارہے ہیں۔ اس موقع پر مسجد کی تعمیر کیلئے ایک گنٹہ مفت اراضی دینے والے ستیہ نارائن کے افراد خاندان کیلئے دعاء کی گئی اور تمام مسلمانوں کی جانب سے ان سے اظہار تشکر کیا گیا۔ واضح رہے کہ سابق زیڈ پی ٹی سی ستیہ نارائن نے کچھ سال قبل کاغذ نگر مستقر کے مسلم میناریٹی شادی خانہ کے تعمیراتی کاموں کیلئے دو پلاٹس مفت اراضی دی تھی تاکہ مسلمانوں کی مدد ہو۔ اس موقع پر دہے گاؤں میں مسجد کے تعمیراتی کاموں میں مفت ایک گنٹہ اراضی دینے والے سابق زیڈ پی ٹی سی ستیہ نارائنا نے کہا کہ ہم نے طئے کیا کہ ہمارے گاؤں میں پوجا کے بجائے اذان کی آوازسارے دہے گاؤں میں گونجے تاکہ سارے گاؤں میں امن کا ماحول پیدا ہواس لئے ہم نے ہندو اور مسلم یکجہتی کیلئے رسم ادا کرتے ہوئے دہے گاؤں میں مسجد کے تعمیراتی کاموں کیلئے مفت اراضی دینے کا فیصلہ کیا، اور روزانہ پانچ وقت نمازوں کو پابندی سے ادا کرنے کا مشورہ دیا تاکہ سارے گاؤں میں اچھا اور امن کا ماحول بنارہے۔ اس موقع پر مسٹر ستیہ نارائن کی مسلمانوں کی جانب سے کثرت سے گلپوشی اور شال پوشی کی گئی اور فاتحہ خوانی کے ساتھ مسجد محمدیہ کا افتتاح عمل میں آیا۔ اس موقع پر وظیفہ یاب ایف آر زاہد علی، پرنسپل محمد آصف علی، محمد حمایت علی، قدرت اللہ کفیل، جماعت اسلامی ہند رکن محمد منصور احمد کے علاوہ مسلمانوں کی کثیر تعداد نے نماز جمعہ ادا کرتے ہوئے مسجد کا افتتاح عمل میں آیا۔ ایس آئی محمد سراج احمد نے شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT