Wednesday , March 29 2017
Home / مذہبی صفحہ / ’’ مرقع انوار‘‘ ایک جائزہ

’’ مرقع انوار‘‘ ایک جائزہ

مولاناسید صادق انواری اشرفی کامل جامعہ نظامیہ

شیخ الاسلام حافظ امام محمد انواراللہ فاروقی نوراللہ مرقدہ کی تاریخ ساز شخصیت ،عہد ساز خدمات پر دلآویز سہ لسانی مصور یادگار ضخیم تذکرہ بنام مرقع انوار ہے۔ ڈاکٹر محمد عبدالحمید اکبر صدر شعبہ اردو گلبرگہ یونیورسٹی نے یونیورسٹی آف پونہ ’پونے‘ سے بانی جامعہ نظامیہ شیخ الاسلام حضرت مولانا محمد انواراللہ فاروقی شخصیت علمی و ادبی کارنامے پر پی۔ایچ ۔ڈی کی ڈگری حاصل کی اور اس مقالے کو ۲۰۰۰عیسوی میں منظر عام پر لایا۔مرقع انوار سہ لسانی یعنی اردو ،عربی اور انگریزی زبان میں ہے جس میں مختلف اسکالرس کے اردو ،عربی، انگریزی مقالات کا مجموعہ ہے اور یہ کتاب کل تیرہ (۱۳)ابواب پر مشتمل ہے۔ ان تیرہ ابواب کے بعد منظومات و مناقب بشان حضرت شیخ الاسلام و مادر علمی جامعہ نظامیہ کے عنوان پر مختلف و مشہور شعراء کرام کے شعری تخلیقات ہیں۔ اور ابتدائی رنگین صفحات ۔ عکوس آثار و باقیات الصالحات پیش ہوئے ہیں جنہوں نے اس کتاب کی خوبصورتی و جامعہ نظامیہ و حضرت بانی جامعہ نظامیہ علیہ الرحمہ کے نوادرات و آثارنے تاریخی حقائق میں اور اضافہ کیاہے۔مرقع انوار کے کل مقالات و مضامین وغیرہ کو بڑی نفاست و ترتیب کے ساتھ لکھا گیا ہے۔ زبان عام فہم، سادہ و رواں دواں استعمال کی گئی ہے۔ حسن طباعت و دیدہ زیب ٹائٹل نے خوب صورتی بڑھا دی ہے ۔ مولانا محمد یوسف اشرفی فاضل جامعہ نظامیہ نے اس نایاب کتاب مرقع انوار کو۔پی۔ڈی۔یف۔کیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT