Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / مرکزی بجٹ کو فبروری کے بجائے جنوری میں پیش کرنے کی تجویز

مرکزی بجٹ کو فبروری کے بجائے جنوری میں پیش کرنے کی تجویز

وزارت فینانس کی جانب سے بجٹ کی پیشگی تیاری اور ریلوے بجٹ کو علحدہ پیش کرنے کا عمل ختم کرنے پر غور
نئی دہلی ۔21اگست ( سیاست ڈاٹ کام )  مرکزی بجٹ کو برسوں سے فبروری کے آخری دن پیش کیا جاتا ہے لیکن اس مرتبہ بجٹکی پیشکشی میں تبدیلی لائی جانے کا امکان ہے ۔ وزارت  فینانس نے عام بجٹ کو فبروری کے بجائے جنوری میں پیش کرنے پر غور کیا ہے تاکہ نیا مالیاتی سال شروع ہونے سے قبل ہی بجٹ کی تیاری مکمل کرلی جائے ۔ وزارت فینانس نے پورے بجٹ کا جائزہ لیا ہے اور یہ غور کرنا شروع کیا ہے کہ ریلوے بجٹ کی پیشکشی کے لئے پورے طریقہ کار کو بھی تبدیل کردیا جائے ۔ اب یہ ریلوے بجٹ بھی عام بجٹ کے ساتھ پیش کرنے کی تجویز ہے ۔ بجٹ دستاویزات بالواسطہ ٹیکس تجاویز کو بھی شامل کرلیا جائے گا ۔ اکسائز ڈیوٹیز‘ سرویس ٹیکس اور چنگی لگانے کی تجاویز کے بعد اس بالواسطہ ٹیکس کی بجٹ میں کوئی صراحت نہیں ہوگی ۔ اب یہ تمام ٹیکس گڈس اینڈ سرویس ٹیکس میں ضم ہوں گے ۔ منصوبہ جاتی اور غیر منصوبہ جاتی مصارف کا بھی طریقہ کار ختم کردیا جائے گا ۔ اس کی بجائے سرمایہ اور مالیاتی مصارف کی اصطلاح استعمال کی جائے گی ۔ ذرائع نے کہا کہ حکومت کا خیال ہے کہ بجٹ کی تیاری کے عمل کو ہر سال 31مارچ سے شروع کیا جاتا ہے جو موجودہ طریقہ عمل کے برعکس ہے ۔ جو دو مرحلوں فبروری اور مئی کے درمیان پیش کیا جاتا ہے جبکہ دستور میں ایسی کوئی وضاحت نہیں ہے کہ بجٹ کی پیشکشی کیلئے کوئی مخصوص دن مقرر کیا جائے ۔

عام طور پر یہ بجٹ فبروری کے آخری دن پیش کیا جاتا رہا ہے ۔ بعدازاں سال کے درمیان میں پارلیمانی منظوری کے بعد بجٹ کو دو مرحلوں میں روبہ عمل لایا جانا تھا جیسا کہ مالیاتی سال یکم اپریل سے شروع ہوتا ہے ۔ حکومت اس بجٹ کو مارچ میں پارلیمنٹ سے منظور کرالیتی ہے اور اس کیلئے علی الحساب بجٹ پیش کیا جاتا ہے ۔ ذرائع کے مطابق اب وزارت فینانس نے تجویز رکھی ہے کہ سابق عمل کو ختم کر کے عام بجٹ کو مکمل طور پر 31 مارچ  سے قبل ہی منطور کرایا جائے ۔محکمہ مال کو بھی مختلف دعویداروں کے رقمی ادائیگیوں کیلئے ماقبل بجٹ اقدامات کرنے کی ضرورت نہیں ہوںگی ۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی نے اپنی بجٹ تقریر میں اعلان کیا ہے کہ سال 2017-18ء سے منصوبہ جاتی اور غیر منصوبہ جاتی پلان کو ختم کردیا جائے گا جبکہ 12ویں پنچ سالہ  منصوبہ کو ختم کردیا گیا تھا ۔ سال 2001ء میں این ڈی اے حکومت نے بجٹ کی پیشکش کے وقت ہی تبدیلی لائی تھی ۔ بجٹ کو دن کے آخر میں پیش کرنے کیلئے بجٹ کو اس وقت کے وزیر فینانس یشونت سنہا نے مرکزی بجٹ کو 11بجے دن پیش کیا تھا ۔ اس کے بعد سے یہ عام بجٹ دن کے 11بجے ہی پیش کیا جارہا ہے اور نئی تجویز کے مطابق فبروری کے آخری دن بجٹ پیش کرنے کے بجائے ایک ماہ قبل جنوری میں بجٹ کی پیشکشی پر غور کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT