Thursday , September 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مرکزی حکومت کے ارادوں کو ناکام بنانے مسلمانوں کو متحد ہونے کا مشورہ

مرکزی حکومت کے ارادوں کو ناکام بنانے مسلمانوں کو متحد ہونے کا مشورہ

عید گاہ کمیٹی بیدر کے اجلاس سے سابق رکن اسمبلی لئیق الدین اور دیگر کا خطاب
بیدر۔27نومبر۔(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)۔ جناب محمداحمد سیٹھ صدر عیدگاہ کمیٹی بید رکی زیرصدارت عیدگاہ (سنی ) بیدر کے مینجنگ کمیٹی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جناب محمدلئیق الدین ایڈوکیٹ سابق چیرمین کرناٹک وقف بورڈ وسابق رکن اسمبلی بیدر نے کہاکہ بیدر کی عیدگاہ 500سالہ قدیم عیدگاہ ہے۔ جس پر اشوک سیٹھ نامی شخص نے قبضہ کرلیاتھا ۔ اس شخص کو عیدگاہ کی اراضی پر سے ہٹانے میں خاکسار کا اہم رول رہا۔عیدگاہوں اور مساجد وغیرہ سے متعلق مرکزی حکومت کے حالیہ فیصلوں کو مسلمانوں کے خلاف بتایا اور مسلمانان ہند کو مشورہ دیاکہ آپسی اتحاد کے ذریعہ سے مرکزی حکومت کے ارادے کو ناکام بنائیں۔ جناب عامرپاشاہ جنرل سکریٹری عیدگاہ (سنی) محمدآباد بیدرنے اپنے خطاب میں بتایاکہ بیدر کی عیدگاہ کمیٹی ترقیاتی کاموں کاارادہ کرچکی ہے۔فرسٹ فلور کی تعمیر کے ذریعہ ایک بہتراسپتال اور جامعہ بنانے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ عیدگاہ بیدر کی اراضی 8ایکٹر ، 23گنٹوں پر مشتمل ہے۔ اور 79دوکانیں اس کی جملہ ملکیت ہیں۔انھوں نے مزید بتایاکہ عیدگاہ بیدر کی یافت اور خرچ میں زیادہ فرق نہیں ہے۔ تمام اخراجات کے بعد صرف20%رقم ہی بچتی ہے۔ چونکہ ترقیاتی کاموں کو انجام دینا ہے اس لئے غوروفکر کے بعد تجاویز پیش کئے جائیں کہ ترقیاتی کاموں کی انجا م دہی کیسے ہو؟ عیدگاہ اراضی پر رہی ملگیات کے کرایہ کو اداکرنے میں کرایہ داروں کی ٹال مٹولی اور کرایہ وصولی کا نکتہ اٹھاتے ہوئے جناب محمد احمد سیٹھ  صدر عیدگاہ کمیٹی بیدر نے کہاکہ گذشتہ تین ماہ کے دوران کرایہ کی وصولی کیلئے ہمیں بڑی تکالیف کاسامناکرناپڑاہے۔کچھ کرایہ دار مختلف بہانوں کے ذریعہ کرایہ ادانہیں کررہے ہیں ۔ جناب منیراحمد نے احمدسیٹھ کی تائید کی اور کہا کہ 79ملگیات سے کرایہ وصولی کی صورتحال نہایت خراب ہے ہمیں اس طرف توجہ دیناہوگا۔ جناب موسیٰ محی الدین ایڈوکیٹ نے اجلاس کوآگا ہ کیاکہ پراپرٹی رولس 2014کو ہر حال میں پیش نظررکھناہوگا۔ کرایہ کے ضمن میں کچھ کمی ہوسکتی ہے لیکن ہمیں رولس کے قریب آنا ہی ہوگا۔ جناب نبی قریشی کا خیال تھاکہ عیدگاہ کمیٹی کارویہ اپنے کرایہ داروں کے ساتھ نہایت ہمدردانہ ہے۔اس اجلاس میں جناب شمیم الدین پٹیل چیرمین ضلع بورڈ آف اوقاف نے بتایاکہ عیدگاہ بیدر کے سامنے ایک ایکٹر7گنٹے جو زمین ہے وہ عیدگاہ کی نہیںاوقاف کی ملکیت ہے ۔ اور اس ضمن میںموجودہ ڈپٹی کمشنر انوراگ تیواری نے کام کوآگے بڑھاتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر کے حوالے کیاہے۔ دو دنوں کے اندرون ہم اسسٹنٹ کمشنر سے مل کر اس اراضی سے متعلق بات بتانے کی صحیح پوزیشن میں ہوں گے۔ صدر کی اجازت سے مشورہ دینے کیلئے بھی ایجنڈا میں ایک پوائنٹ تھا جس پر محمداکرم علی کامشورہ تھاکہ عیدگاہ (سنی) بیدر میں نماز عیدین کے موقع پر خواتین کو بھی کونے میں جگہ فراہم کرناوقت کی اہم ضرورت ہے۔ تاکہ لوگ یہ نہ سمجھیں کہ اسلام عورتوں کے معاملے میں کشادہ دل نہیں ہے۔جناب غوث قریشی نے کرایہ داروں کے باب میں کہاکہ کمیٹی کرایہ داروں کاتعاون کرے۔ لیکن کرایہ دار ملگیوں کو دوسرے کو کرایہ پر نہیں دے سکتا۔ جناب یوسف رحیم بیدری نے گزٹ نوٹی فکیشن 2014کے چوتھے نکتہ کی چوتھی ذیلی شق پڑھ کر سنائی اور کہاکہ جو کوئی کمیٹی کا رکن ہے یا ان کے رشتہ دار اور بچے ہیں ، وہ کرایہ پر زمین یا ملگیاں حاصل نہیں کرسکتے۔اس قاعدے کی طرف اراکین توجہ دیں۔‘ جناب سراج الدین انجینئر نے عیدگاہ کمیٹی بیدر کوصرف رضائے الٰہی کے لئے کام کرنے کی تلقین کی۔الحاج محمد ابراہیم‘ محمد ارشاد علی پہلوان سابق رکن بلدیہ بیدر‘سید منصور احمد قادری‘عبدالعزیز منا ‘محمد نبی قریشی  ارکانِ بلدیہ بیدر‘ اکبر گادگی پٹھان گلی  بیدر‘ عبدالسلام صفی ‘حسن پٹیل ‘خالد شریف ‘ محمد عبدالصمد نائب قاضی ‘محمد کلیم الدین پٹیل میلور‘مولوی محمد ظفر اُللہ خان ‘شاہ حامد محی الدین قادری نے عیدگاہ کی ترقی کیلئے مفید تجاویز پیش کئے ۔ جناب طہٰ کلیم صدیقی ایگزیکٹیورکن عیدگاہ کمیٹی بیدر نے ابتداء میں سورہ توبہ کی منتخب آیات پر تذکیر بالقرآن کیا۔ اور بتایا کہ جو مسلمان اللہ کے گھروں کو آباد کرتے ہیں ان کی زندگی اور ان کاباہمی تعلق کس طرح کاہونا چاہیے۔جناب محمد مجتبیٰ خان ایگزیکٹیو رکن عیدگاہ کمیٹی بیدر نے نظامت کافریضہ انجام دیا۔جناب محمدنثاراحمد نائب صدر عیدگاہ بیدر کے اظہار تشکر‘ اور جناب شاہ سیف الا سلام کنجِ نشین کی پُر اثر دعا پر پر اجلاس اختتام کو پہنچا۔ بعدنماز ظہر اجتماعی ضیافت کااہتمام عیدگاہ کمیٹی نے کیاتھا۔اجلاس میں ضلع وقف آفیسر اور  ارکانِ عاملہ و شوری کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT