Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / مرکز کی طرز پر ریاست میں متبادل ادویات و طریقہ علاج کا فروغ

مرکز کی طرز پر ریاست میں متبادل ادویات و طریقہ علاج کا فروغ

نظامیہ طبی ہاسپٹل کے فنڈ میں اضافہ کے لیے محمد علی شبیر کا دباؤ ، کونسل میں سی لکشما ریڈی کا جواب
حیدرآباد۔4۔جنوری (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت نے مرکزی حکومت کے طرز پر متبادل ادویات و طریقہ علاج کے فروغ کے اقدامات کررہی ہے۔ حکومت کی جانب سے یونانی اور آیورویدک کی ترقی کے لئے سنجیدہ ہے ۔ریاستی وزیر صحت مسٹر سی لکشما ریڈی نے قانون ساز کونسل میں وقفہ سوالات کے دوران یہ بات بتائی۔ انہوںنے بتایا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے متبادل طریقہ علاج کے فروغ کیلئے علحدہ وزارت آیوش کا قیام عمل میں لایا ہے تاکہ دیسی طریقہ علاج کو فروغ دیا جا سکے۔حکومت تلنگانہ بھی مرکزی حکومت کی پالیسی کو اختیار کرتے ہوئے دیسی طریقہ علاج کے فروغ کے لئے کوشاں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یونانی طریقہ علاج کے فروغ کیلئے حکومت کی جانب سے نظامیہ طبی کالج یونانی دوخانہ میں لیبر روم کیلئے 10لاکھ روپئے منظور کئے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کی جانب سے آیورویدک اور یونانی طریقہ علاج کے فروغ کیلئے سنجیدہ اقدامات کرتے ہوئے فنڈز کی تخصیص اور اجرائی عمل میںلائی جا ئے گی۔ جناب محمد علی شبیر قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل نے اس سوال کے دوران مباحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ 10لاکھ روپئے کی اجرائی ناکافی ہے اور متبادل طریقہ علاج کے فروغ کیلئے اقدامات کے طورپر حکومت کو عوام میں بھی شعور اجاگر کرنا چاہئے ۔ انہوں نے بتایا کہ یہ شکایات موصول ہو رہی ہیں کہ ڈاکٹرس اضلاع میں خدمات انجام دینے سے انکار کررہے ہیں ایسا ہونے دینے پر اضلاع میں یونانی کا فروغ ممکن نہیں ہو پائے گا۔ مسٹر لکشما ریڈی نے مسٹر پی سدھاکر ریڈی کی جانب سے اٹھائے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت ایلوپیتھی طریقہ علاج کے متبادل تمام آیوش کے طریقہ طب کو فروغ دیتے ہوئے فنڈز کی اجرائی یقینی بنائے گی۔

TOPPOPULARRECENT