Saturday , October 21 2017
Home / ہندوستان / مرکز کے شہریت ترمیمی بل کی مخالفت تریپورہ میں قبائیلی جماعتوں کا احتجاج

مرکز کے شہریت ترمیمی بل کی مخالفت تریپورہ میں قبائیلی جماعتوں کا احتجاج

اگرتلہ۔16 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) تریپورہ میں غیر بائیں بازو کی قبائیلی جماعتوں نے آل تریپورہ انڈیجنس ریجنل پارٹنر فورم کا قیام عمل میں لایا ہے تاکہ بی جے پی کی زیر قیادت این ڈی اے حکومت کے کو متعارف کردہ شہریت ترمیمی بل 2016 ء کی مخالفت کی جائے۔ فورم کے کنوینر این سی دیپا راما نے بتایا کہ ریاست میں قبائیلیوں کے مفادات کے تحفظ اور سلامتی کے لیے 3 سیاسی جماعتوں نے ایک فورم تشکیل دیا ہے جوکہ آبادی کا ایک تہائی حصہ ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ یہ ہمارے متفقہ رائے جبکہ مذکورہ بل، قبائیلیوں کے مفادات کو نقصان پہنچاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ غیر بائیں بازو کی قبائیلی جماعتوں نے طویل مشاورت کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ قدیم ہندوستانی باشندوں کے مفادات کے تحفظ کے لیے متحدہ جدوجہد شروع کی جائے کیوں کہ مرکزی حکومت بیرونی افراد کو شہریت عطا کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے جو کہ قبائیل کے مفادات کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر شہریت ترمیمی بل پارلیمنٹ میں منظور کرلیا گیا تو تریپورہ اور آسام میں بھی بیرونی شہریوں کی دراندازی سے گڑبڑ پیدا ہوسکتی ہے اور لاکھوں بیرونی افراد ہندوستانی شہری کا درجہ حاصل کرنے سے مقامی قبائیل کے لیے سنگین خطرہ درپیش ہوگا اور اس مسئلہ پر 8 فبروری کو تریپورہ میں 12 گھنٹوں کا بند منایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT