Thursday , September 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مستحقین کو راست قرض فراہمی پر غور

مستحقین کو راست قرض فراہمی پر غور

غیر مستحقین کے خلاف فوجداری مقدمہ کا انتباہ :سید اکبر حسین

محبوب نگر ۔ 23 ؍ اپریل ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) جو کام گذشتہ 60 برس میں نہیں ہوسکتے تھے ہمارے چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے صرف 3 برس میں کر دکھایا ۔ ان خیالات کا اظہار مشترکہ طو رپر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ریاستی اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کے چیرمین سید اکبر حسین اور مقامی ایم ایل اے سرینواس گوڑ نے کیا ۔ آر اینڈ بی گیسٹ ہاوز میں منعقدہ کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملک بھی ریاست تلنگانہ فلاحی و ترقیاتی اسکیموں کی دوڑ میں سب سے آگے ہے ۔ کے سی آر نے وعدہ بھی کیا تھا تلنگانہ کو ملک کی مثالی ریاست بنایا جائیگا اور وہ تیزی کے ساتھ اپنا کام جا ری رکھے ہوئے ہیں ۔ خصوصاً اقلیتوں کی تعلیمی ترقی کے لئے بے مثال اقدامات کئے گئے 204 ریذیڈیشنل اسکولس کا جال پھیلایا گیا جہاں معیاری تعلیم اور بہترین طعام و قیام کا نظم ہے حال ہی میں 12 فیصد تحفظات کے لئے اسمبلی میں بل منظور کروالیا گیا ۔ سید اکبر حسین نے مزید کہا کہ ضرورتمند مستحقین کو ہی اقلیتی قرضہ جات فراہم کئے جائیں گے اگر کوئی معاشی طور پر مستحکم اس سے استفادہ کی کوشش کی فراہمی میں بنکرس کی طرف سے جو رکاوٹیں پیدا کی جا رہی ہیں ۔ انہیں راست قرضہ فراہم کرنے کی غور کیا جا رہا ہے ۔ حکومت نے اقلیتوں کے لئے 1250 کروڑ کا بجٹ مختص کیا ہے جس سے مکمل استفادہ کے لئے اقدامات کئے جا رہے ہیں ۔ حیدرآباد میں مائیکرولون اسکیم کے تحت اقلیتوں کو سلائی مشین ‘ آٹو ٹیکی کار وغیرہ بھی فراہم کئے جائیں گے ۔ دوسرے مرحلہ میں ریاست کے اضلاع میں اس کا آغاز ہوگا ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ریاست کے اقلیتوں کی پسماندگی دور کرنا انہیں اعلی تعلیم سے آراستہ کرنا کے سی آر کا عین مقصد ہے ۔ اس موقع پر آفس سپرنٹنڈنٹ اقلیتی بہبود سرینواس و دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT