Sunday , September 24 2017
Home / عرب دنیا / مسجد اقصیٰ کے خطیب کئی گھنٹے حبس بے جا میں رکھنے کے بعد رہا

مسجد اقصیٰ کے خطیب کئی گھنٹے حبس بے جا میں رکھنے کے بعد رہا

مقبوضہ بیت المقدس 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اسرائیلی پولیس نے مسجد اقصیٰ کے امام و خطیب الشیخ محمد سلیم کو گرفتار کرنے اور انہیں کئی گھنٹے تک حبس بے جا میں رکھتے ہوئے ان سے تفتیش کے بعد رہا کردیا ہے۔ دوسری جانب اردن نے الشیخ سلیم کی گرفتاری کو عالمی قوانین کی صریح خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے اسرائیلی حکومت سے عالم دین کی گرفتاری کی فوری تحقیقات کا مطالبہ کیاہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی پولیس نے نماز جمعہ کے دوران مسجد اقصیٰ کا گھیراؤ کرلیا اور نماز جمعہ کے بعد جب مسجد کے خطیب الشیخ سلیم باہرنکلنے لگے توانہیں حراست میں لے لیا گیا۔ گرفتاری کے بعد کئی گھنٹے تک انہیں ایک حراستی مرکز میں حبس بے جا میں رکھا گیا جہاں ان سے غیرمہذبانہ انداز میں تفتیش کی گئی۔بعد ازاں انہیں رہا کردیا گیا تھا۔  قبل ازیں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے الشیخ محمد سلیم نے فلسطینی عوام پر زور دیا تھا کہ وہ رجب المرجب شریف میں اپنا زیادہ سے زیادہ وقت قبلہ اول میں گذاریں تاکہ یہودیوں کی مسجد اقصیٰ کے خلاف جاری ریشہ دوانیوں کو ناکام بنایا جاسکے۔نماز جمعہ کے موقع پر اسرائیلی فوج نے جگہ جگہ ناکہ بندی کرکے  فلسطینی شہریوں پرپابندیاں عاید کرنے کی کوشش کی مگر اس کے باوجود 70 ہزار فلسطینیوں نے نماز جمعہ مسجد اقصیٰ میں ادا کی۔

TOPPOPULARRECENT