Tuesday , September 26 2017
Home / عرب دنیا / مسجد اقصی میں سی سی کیمرے نصب کرنے نتن یاہو کا فیصلہ

مسجد اقصی میں سی سی کیمرے نصب کرنے نتن یاہو کا فیصلہ

پرتشدد واقعات کا سلسلہ جاری ۔ دو فلسطینیوں کو گولی ماردی گئی ۔ ایک اسرائیلی میں زخمی
یروشلم 25 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کے مابین تازہ تشدد پھوٹ پڑا ہے جبکہ وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو نے مسجد اقصی کے احاطہ میں اہم مقامات پر کشیدگی کو کم کرنے سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے سے اتفاق کیا ہے ۔ تشدد میں دو فلسطینیوں کو ہلاک کردیا گیا جبکہ چاقو زنی کی واردات میں ایک اسرائیلی زخمی ہوگیا ۔ کہا گیا ہے کہ ایک فلسطینی شخص نے ایک اسرائیلی کو مغربی کنارہ میں چاقو مار کر زخمی کردیا جبکہ ایک فلسطینی شخص کو ایک یہودی نے بے دریغ گولیاں مارتے ہوئے ہلاک کردیا ۔ فوج اور سکیوریٹی ذرائع نے یہ بات بتائی ۔ اس کے علاوہ ایک فلسطینی لڑکی کو اسرائیلی بارڈر پولیس نے اس وقت گولی مار کر ہلاک کردیا جبکہ اس نے کچھ پولیس اہلکاروں کو مغربی کنارہ کے شہر حبرون میں چاقو مارنے کی کوشش کی تھی ۔ پولیس کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ایک فلسطینی خاتون نے مشتبہ انداز میں نقل و حرکت کرتے ہوئے بارڈر پولیس کی سمت پیشرفت کی کوشش کی تھی ۔ اس کو شناخت کروانے کو کہا گیا لیکن جب اس نے اچانک چاقو نکال لیا اور پولیس فورس کی سمت بڑھ رہی تھی اس وقت اس کو گولی ماردی گئی اور وہ ہلاک ہوگئی ۔ اس کی 17 سالہ دانیہ ارشاد کی حیثیت سے شناخت ہوئی ہے ۔ کسی پولیس اہلکار کو کوئی زخم نہیں آئے ہیں۔ فلسطینیوں اور اسرائیلیوں کے مابین اکٹوبر کے آغاز کے بعد سے ہی جھڑپیں عام ہوگئی ہیں اور تشددکے واقعات پیش آ رہے ہیں۔ مسجد اقصی کے احاطہ میں اسرائیل کی جارحیت کے خلاف فلسطینیوں کی جانب سے احتجاج کیا جا رہا ہے ۔وزیر اعظم اسرائیل نتن یاہو نے کہا ہے کہ ان کی حکومت مسجد اقصی کے احاطہ میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کو تیار ہے تاکہ اشتعال انگیزیوںکو روکا جاسکے ۔

TOPPOPULARRECENT