Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / مسجد چیونٹی شاہ کے تحت قبرستان کی اراضی پر پٹہ جات منسوخ

مسجد چیونٹی شاہ کے تحت قبرستان کی اراضی پر پٹہ جات منسوخ

حیدرآباد ۔ 19 ڈسمبر (راست) مسجد چیونٹی شاہ، کٹل گوڑہ کے تحت قبرستان کی اراضی کو سرکاری اراضی قرار دیتے ہوئے کلکٹر حیدرآباد کی جانب سے مسجد کمیٹی کے کرایہ داروں کو پٹہ جاری کرنے کے خلاف مسجد کمیٹی کے سکریٹری باسط نواز خان اور وارث محمد خان عرف خلیل، صدر تلنگانہ وقف پروٹیکشن سوسائٹی نے دکن وقف پراپرٹیز پروٹیکشن سوسائٹی کے صدر جناب عثمان بن محمد الہاجری و جناب سید کریم الدین شکیل ایڈوکیٹ سے رجوع ہوئے، جس پر بذریعہ جناب سید کریم الدین شکیل ایڈوکیٹ جناب عثمان بن محمد الہاجری صدر دکن وقف پراپرٹیز پروٹیکشن سوسائٹی کی جانب سے ایک قانونی نوٹس سیکشن (80) کے تحت کلکٹر حیدرآباد کو جاری کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ وقف پراپرٹی قبرستان کو سرکاری اراضی میں تبدیل کرتے ہوئے پٹہ جات جاری کرنے کا عمل سراسر غیرقانونی ہے اور پٹوں کو فوری منسوخ کیا جائے اور نوٹس کی کاپیاں تمام متعلقہ ریونیو کے عہدیداروں کے علاوہ چیف منسٹر تلنگانہ کو بھی روانہ کی جس پر اوقاف بورڈ نے بھی مذکورہ کلکٹر کے عمل کو غیرقانونی قرار دیا اور تمام متعلقہ و اوقافی عہدیداروں کی جانب سے سروے کرنے کے بعد کلکٹر حیدرآباد نے مسجد چیونٹی شاہ کٹل گوڑہ کے تحت کے قبرستان کی اراضی کو سرکاری قرار دیکر جاری کردہ تمام پٹہ جات کو منسوخ کرنے کا حکم جاری کیا۔ جناب محمود علی ڈپٹی چیف منسٹر کی ایماء پر فوراً سروے کرکے منسوخی کیلئے سرعت سے عمل کیا گیا۔ اس سلسلہ میں اہلیان محلہ محمد جہانگیر، محمد فاروق، محمد اسداللہ، محمد حامد، محمد صالح چاوش و صدر تلنگانہ وقف پروٹیکشن ویلفیر سوسائٹی و محمد باسط نواز خان، سکریٹری نے جناب دکن وقف پروٹیکشن سوسائٹی کے صدر جناب عثمان بن محمد الہاجری و جناب سید کریم الدین شکیل ایڈوکیٹ کی جانب سے سرعت کے ساتھ مذکورہ کلکٹر حیدرآباد کی جانب سے غیرقانونی عمل کے خلاف جدوجہد و کامیابی پر دلی مبارکباد پیش کی اور جناب زاہد علی خان ایڈیٹر سیاست حیدرآباد کی جانب سے سرپرستی اور مدد کیلئے شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT