Sunday , August 20 2017
Home / پاکستان / مسعود اظہر کی گرفتاری اور پاکستان کی مجبوری

مسعود اظہر کی گرفتاری اور پاکستان کی مجبوری

اسلام آباد ۔ 15 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان میں جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر، ان کے بھائی اور دیگر افراد کی گرفتاری کو پاکستان کی جانب سے ایک غیرمتوقع اقدام تصور کیا جارہا ہے۔ یاد رہیکہ جیش محمد کو ہی پٹھان کوٹ دہشت گرد حملوں کا ذمہ دار قرار دیا جارہا ہے۔ معتمدین خارجہ کی ملاقات جو 15 اور 16 جنوری کو مقرر ہے، سے صرف دو روز قبل پاکستان کے مسعود اظہر کے خلاف عاجلانہ کارروائی کرکے گرفتار کرنے کے پس پشت بھی کوئی نہ کوئی وجوہات ہیں جبکہ قبل ازیں پاکستان کی جانب سے دہشت گرد تنظیموں کے خلاف بروقت کارروائی نہ کرنے پر دونوں ممالک کے تعلقات کشیدہ بھی ہوچکے ہیں۔ تاہم وہ کیا وجوہات ہیں جن کی وجہ سے پاکستان نے بروقت کارروائی کی۔ سب سے پہلے تو پاکستان پر عالمی دباؤ تھا۔ امریکی وزیرخارجہ جان کیری نے وزیراعظم پاکستان سے فون پر بات چیت کرتے ہوئے بروقت کارروائی کا مطالبہ کیا تھا جبکہ نواز شریف نے وعدہ کیا تھا کہ بروقت کارروائی کی جائے گی۔ امریکہ کے علاوہ چین نے بھی حملوں کی مذمت کرتے ہوئے بروقت کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔ دوسری اہم وجہ یہ ہیکہ اس وقت پاک ۔ امریکہ تعلقات اپنے خوشگوار ترین دور سے گذر رہے ہیں جہاں دونوں ممالک ایکدوسرے کو ’’ہر موسم کا دوست‘‘ کہہ رہے ہیں۔ امریکہ نے اسامہ بن لادن کو پاکستانی سرزمین پر ہی قتل کیا تھا تاہم اس کے بعد مختصر عرصہ کیلئے ضرور بگڑے تھے اور اس وقت امریکہ نے پاکستان سے شکایت کی تھی کہ وہ حقانی نیٹ ورک کے خلاف مؤثر کارروائی نہیں کررہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT