Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلمانوں کو آٹو رکشا اسکیم ، 2385 درخواستوں کا ادخال

مسلمانوں کو آٹو رکشا اسکیم ، 2385 درخواستوں کا ادخال

درخواستوں کی تنقیح باقی ، پچاس فیصد سبسیڈی ، بروکرس کی چاندی
حیدرآباد/22اکٹوبر ، ( سیاست نیوز) اقلیتی فینانس کارپوریشن کی جانب سے حیدرآباد اور رنگاریڈی میں غریب مسلمانوں کو آٹو رکشا فراہمی سے متعلق اسکیم میں درخواست دینے کا آج آخری دن تھا اور ایک اندازہ کے مطابق 2385 درخواستیں داخل کی گئی ہیں۔ رات 12بجے تک بھی اقلیتی فینانس کارپوریشن کی جانب سے خصوصی کاؤنٹرس قائم کئے گئے جہاں امیدواروں نے اپنے دستاویزات داخل کئے۔ منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ کے مطابق درخواست گذاروں کی حقیقی تعداد کا اندازہ کل تک ہوجائے گا کیونکہ درخواستوں کی جانچ ابھی جاری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ شرائط کی تکمیل اور ڈرائیونگ لائسنس کی سینیاریٹی کے لحاظ سے امیدواروں کو ترجیح دی جائے گی۔ اس اسکیم کے تحت آٹو کی 50فیصد قیمت اقلیتی فینانس کارپوریشن بطور سبسیڈی فراہم کرے گا جبکہ 50فیصد رقم بینک بطور قرض جاری کرے گا۔ بینکرس نے اس اسکیم میں مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔ تعطیلات کے باوجود حج ہاوز میں خصوصی کاؤنٹر قائم کرتے ہوئے اس اسکیم کی درخواستیں وصول کی گئیں۔ درخواستوں کی جانچ کے بعد اگر ان کی تعداد 1000 سے زائد ہو تو امکان ہے کہ قرعہ اندازی کے ذریعہ امیدواروں کا انتخاب کیا جائے گا۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی خصوصی دلچسپی سے اس اسکیم کا آغاز کیا گیا ہے اور امیدواروں کے انتخاب کیلئے اعلیٰ عہدیداروں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ دونوں شہروں میں اسکیم پر کامیاب عمل آوری کے بعد اسے اضلاع میں توسیع دینے کا منصوبہ ہے ۔ منتخب امیدواروں میں آٹوز کی اجرائی 11نومبر کو ’ یوم اقلیتی بہبود ‘ کے موقع پر عمل میں آئے گی۔ ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کی یوم پیدائش کو ہر سال ’’ یوم اقلیتی بہبود ‘‘ کے طور پر منایا جاتا ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے ہاتھوں آٹوز کی اجرائی عمل میں آئے گی۔ اسی دوران جنرل منیجر اقلیتی فینانس کارپوریشن سید ولایت حسین نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اسکیمات سے استفادہ کیلئے درمیانی افراد اور بروکرس کا شکار نہ ہوں۔ کارپوریشن کو شکایات ملی ہیں کہ حج ہاوز کے احاطہ میں کئی بروکرس سرگرم ہیں جو اقلیتی فینانس کارپوریشن کی اسکیمات اور شادی مبارک اسکیم کی منظوری کا لالچ دے کر بھاری رقم وصول کررہے ہیں۔ غریب اور بھولے بھالے افراد ان کا شکار ہورہے ہیں۔ جنرل منیجر نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اس طرح کے بروکرس کے بارے میں اعلیٰ عہدیداروں کو اطلاع دیں تاکہ ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی مدد کے سلسلہ میں عوام حج ہاوز کی 5ویں منزل پر ان سے راست طور پر رجوع ہوسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT