Friday , September 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مسلمانوں کو فوری 12فیصد تحفظات کا مطالبہ

مسلمانوں کو فوری 12فیصد تحفظات کا مطالبہ

محبوب نگر میں مسلم جے اے سی کی بھوک ہڑتال، علماء و مشائخین کا اظہار یگانگت

محبوب نگر۔/26اگسٹ، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مستقر محبوب نگر کے تلنگانہ چوراستہ پر مسلم ریزرویشن جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی 36گھنٹے کی بھوک ہڑتال آج دوسرے دن میں داخل ہوگئی۔ تقریباً سیاسی جماعتوں کے قائدین اور تنظیموں کے عہدیداران، علماء و مشائخین بڑی تعداد میں بھوک ہڑتال کیمپ پہنچ کر بھوک ہڑتالی قائدین سے اظہار یگانگت کررہے ہیں۔ 12فیصد تحفظات کے عاجلانہ حصول کیلئے ایم ار جے اے سی کے بھوک ہڑتالی کیمپ کو زبردست تائید و حمایت حاصل ہورہی ہے۔ کیمپ پہونچنے والوں میں صدر ضلع کانگریس عبید اللہ کوتوال، میونسپل چیرپرسن رادھا امر، غوث ربانی سابق صدر ضلع وقف کمیٹی، آر رامچندریا سابق ایم پی، سی پی ایم کے ضلع صدر عبدالجبار اور گرومورتی، این پی وینکٹیش انچارج تلگودیشم محبوب نگر، مظہر شہید، عبدالہادی ایڈوکیٹ، مرزا قدوس بیگ، سجاد ایڈوکیٹ، نورالحسن، مولانا  نعیم کوثر، رحمن صوفی و دیگر شامل ہیں۔ محمد حنیف احمد ریاستی صدر مسلم ریزرویشن جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے ریاستی چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کیا کہ وہ ریاست بھر سے بلند ہونے والی مسلمانوں کی آواز کو سمجھیں اور بلاتاخیر 12فیصد تحفظات کو یقینی بنائیں تاکہ مسلمان تحفظات سے استفادہ کرسکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ مسئلہ انتہائی حساس ہے اگر ایسا نہ ہوسکا تو پھر تحفظات کے حصول کیلئے احتجاج میں زبردست شدت پیدا کی جائے گی۔ ظفر اللہ صدیقی صدر ضلع ایم آر جے اے سی نے کہا کہ متحدہ طور پر جدوجہد تحفظات کیلئے ضروری ہے۔ ریزرویشن کے باضابطہ حصول تک یہ احتجاج جاری رہے گا۔ بھوک ہڑتال میں حصہ لینے والوں میں صمد خان، اقبال پہلوان، نورالحسن، ایس ایم خلیل، محمد فضل، جہانگیر پاشاہ قادری شامل ہیں جبکہ باگنا گوڑ، رامیشور ایڈوکیٹ اور پی گوڑ ایڈوکیٹ، ایس ایم ملک ایڈوکیٹ، سردار بیگ، شیخ عبداللہ یوسف بن ناصر کے علاوہ اردو میڈیم مدارس کے طلباء و طالبات نے بھی حصہ لیا۔

TOPPOPULARRECENT