Tuesday , September 19 2017
Home / Top Stories / مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کیلئے 10لاکھ سے زائد عوام کی تائید حاصل

مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کیلئے 10لاکھ سے زائد عوام کی تائید حاصل

کانگریس کی دستخطی مہم کا نشانہ عبور، حقوق و انصاف پر مبنی تحریک میں سماج کے تمام طبقات نے حصہ لیا: شیخ عبداللہ سہیل

٭   30تا 40فیصد غیر مسلم افراد نے بھی دستخط کئے
٭   طلبہ و گھریلو خواتین کا بھی حوصلہ افزاء ردعمل
٭  عوام کے جذبات کا احترام نہ کرنے پر احتجاج میں شدت کا منصوبہ
حیدرآباد۔ /20اپریل، ( سیاست نیوز) صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل نے کہا کہ کانگریس کی جانب سے 12 فیصد مسلم تحفظات کے حق میں شروع کردہ دستخطی مہم مقررہ وقت پر 10لاکھ کے نشانہ کو عبور کرچکی ہے، جسے سی ڈی میں چیف منسٹر تلنگانہ کو پیش کیا جائے گا۔ کانگریس پارٹی تحریک میں شدت پیدا کرتے ہوئے وزراء اور ٹی آر ایس کے دوسرے قائدین کا گھیراؤ کرے گی۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی نے 4 اپریل کو گاندھی بھون میں حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ کی جانب سے شروع کردہ دستخطی مہم کا آغاز کیا تھا جس میں دو ہفتوں کے دوران 20اپریل تک 10لاکھ دستخطیں حاصل کرنے کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا۔ اس تحریک کو سماج کے تمام طبقات کی بھرپور تائید حاصل ہوئی ہے۔ آل انڈیا کانگریس کے جنرل سکریٹری و انچارج تلنگانہ کانگریس اُمور مسٹر ڈگ وجئے سنگھ نے بھی دستخطی مہم میں حصہ لیا ہے۔ صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل نے بتایا کہ 12فیصد مسلم تحفظات کی تائید میں کانگریس کی جانب سے شروع کردہ تحریک کامیاب رہی ہے اور سماج کے تمام طبقات بالخصوص 30 تا 40 فیصد غیر مسلم نے دستخط کرتے ہوئے چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کو وعدہ کے مطابق مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

ساتھ ہی ساتھ دستخطی مہم کو طلبہ کا حوصلہ افزاء رد عمل حاصل ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 12فیصد مسلم تحفظات کی دستخطی مہم کو سوشیل میڈیا خاص طور پر واٹس ایپ، فیس بُک، ای میل، ایس ایم ایس کے ذریعہ بھی بھرپور تائید حاصل ہوئی ہے۔ دستخطی مہم کو سماج کے تمام طبقات بشمول طلبہ، گھریلو خواتین، چھوٹے کاروبار سے وابستہ افراد، دانشوروں اور صحافیوں کی بھرپور تائید حاصل ہوئی ہے جس کی وجہ سے دستخطی مہم مقررہ وقت سے قبل ہی اپنے نشانہ کو عبور کرچکی ہے۔ تمام دستخطوں کو سی ڈی کے ذریعہ چیف منسٹر کے سی آر کو روانہ کرتے ہوئے مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا جائے گا۔ انہیں یقین ہے کہ گریٹر حیدرآباد کے 10 لاکھ عوام کے جذبات کا احترام کرتے ہوئے چیف منسٹر مسلمانوں سے کئے گئے وعدہ کو عملی جامہ پہنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بصورت دیگر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ اپنے احتجاج میں شدت پیدا کرے گی۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں وزراء اور ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ و دیگر قائدین کے پروگرامس میں قائدین سے 12فیصد مسلم تحفظات پر عمل آوری پر سوالات کئے جائیں گے۔

قائدین کے گھیراؤ سے بھی گریز نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ  وقت اور حالات کے لحاظ سے احتجاجی پروگرامس کو قطعیت دی جائے گی۔ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل نے کہا کہ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی نے دستخطی مہم کو تلنگانہ کے تمام اضلاع اور شہروں میں توسیع دینے کی ہدایت دی ہے۔ اضلاع میں کانگریس قائدین کی حوصلہ افزائی کیلئے گریٹر حیدرآباد میں دستخطی مہم کا نشانہ مکمل ہونے کے باوجود دستخطی مہم کو جاری رکھا جائے گا اور مختلف پروگرامس کا اہتمام کرتے ہوئے عوام بالخصوص مسلمانوں میں شعور بیدار کرتے ہوئے 12فیصد مسلم تحفظات فراہم کرنے کیلئے ٹی آر ایس حکومت پر جمہوری انداز میں دباؤ بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کی دستخطی مہم کو پارٹی کے تمام سینئر قائدین کی بھرپور تائید حاصل ہے۔ انہوں نے بتایا کہ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر کی جانب سے کل اندرا بھون میں پیش کردہ مسلم تحفظات پر پاور پوائنٹ پریزنٹیشن کامیاب رہا جس میں پارٹی کے تمام سینئر قائدین، ارکان اسمبلی و ارکان قانون ساز کونسل کے علاوہ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی عاملہ کے قائدین نے شرکت کرتے ہوئے 12فیصد مسلم تحفظات کی تحریک کیلئے مکمل تعاون پیش کرنے کا تیقن دیا ہے۔ اضلاع سے بھی رضاکارانہ تنظیمیں تحریک کا حصہ بنتی جارہی ہیں اور اپنی دلچسپی دکھارہی ہیں۔ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل نے اعلان کیا کہ عیدالفطر کے بعد ماہ جولائی میں کانگریس کی جانب سے فراہم کردہ مسلم تحفظات کے 12سال مکمل ہونے پر ’’ یوم مسلم تحفظات ‘‘ کا اہتمام کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT