Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / مسلمانوں کے بارے میں ریمارکس کی سخت مذمت

مسلمانوں کے بارے میں ریمارکس کی سخت مذمت

سماج کو تقسیم کرنے کی کوشش کا الزام ، وزیر قانون کی مدافعت
نئی دہلی ۔ 22 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام ) : مسلمانوں کے بارے میں مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد کے ریمارک پر اپوزیشن جماعتوں نے شدید تنقید کی لیکن وہ اپنے موقف پر قائم ہیں ۔ کانگریس ، بایاں بازو اور دیگر جماعتوں نے کہا کہ دستور میں تمام ہندوستانیوں کو چند بنیادی حقوق کی ضمانت دی گئی ہے ۔ ان میں مسلمان بھی شامل ہیں اور یہ وزیر کی کوئی بھیک نہیں ۔ کانگریس لیڈر ایم ویرپا موئیلی نے روی شنکر پرساد پر سماج کو تقسیم کرنے کی کوشش کا الزام عائد کیا ۔ پرساد نے کل کہا تھا کہ مسلمانوں نے بی جے پی کو ووٹ نہیں دیا لیکن ان کی حکومت نے انہیں عزت دی ۔ ہم نے اپنے بل بوتے پر 13 چیف منسٹرس کو یقینی بنایا ۔ آج ہم ملک پر حکمرانی کررہے ہیں ۔ کیا کسی انڈسٹری یا شعبہ میں کام کررہے کسی مسلمان کو ہم نے نشانہ بنایا ؟ کیا ہم نے انہیں معزول کیا ؟ ہم نے مسلم ووٹ حاصل نہیں کئے اور یہ بات واضح طور پر وہ کہنا چاہتے ہیں اس کے باوجود ہم مسلمانوں کو خاطر خواہ عزت دے رہے ہیں یا نہیں ۔ انہوں نے آج بھی اپنے ریمارکس کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ مودی حکومت ہمہ جہتی سماج پر یقین رکھتی ہے اور ہندوستان ثقافتی اقدار کا احترام کرتی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT