Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / مسلمان صرف دستخطی مہم سرگرمی سے جاری رکھیں

مسلمان صرف دستخطی مہم سرگرمی سے جاری رکھیں

جلسے و جلوس سے اجتناب کیا جائے، سکریٹری پرسنل لا بورڈ کا مشورہ
حیدرآباد۔/26اکٹوبر، ( پریس ریلیز) سکریٹری آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ مولانا خالد سیف اللہ رحمانی نے ایک صحافتی بیان میں کہا کہ تین طلاق اور یکساں سیول کوڈ کے سلسلہ میں حکومت اور سرکاری اداروں نے جو رویہ اختیار کیا ہے وہ مسلمانوں کو دینی تشخص سے محروم کرنے اور مذہبی آزادی کے حق کو سلب کرنے کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے اس ضمن میں دستخطی مہم شروع کی لہذا بورڈ کے مقرر کردہ فارم پر ہی دستخطی مہم چلانی چاہیئے۔ خواتین کے دستخط لا کمیشن اور ویمن کمیشن کو بھیجنا ہوگا اور مَردوں کے دستخط لا کمیشن کو بھیجنا ہے۔ دستخطوں کے اصل فارم جمع کرکے مسلم پرسنل لا بورڈ کے دفتر کو بھیجنا ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ، جمعیت علماء ہند، جماعت اسلامی ہند، جمعیت اہلحدیث، آل انڈیا ملی کونسل اور مولانا توقیر رضا خاں ( بریلی ) نے متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا ہے کہ فی الحال صرف دستخطی مہم چلائی جائے اور جلسہ، جلوس و بند وغیرہ سے اجتناب کیا جائے۔ بورڈ کے آئندہ فیصلہ کا انتظار کیا جائے۔ پرسنل لا بورڈ کی جانب سے جب کسی پروگرام کا اعلان ہو تو اسے انجام دیا جائے کیونکہ بورڈ کی حکمت عملی یہ ہے کہ مسلمانوں کے جذبات کا اظہار تو ہو لیکن فرقہ پرست طاقتوں کو اس بات کا موقع نہ ملے کہ وہ ہمارے ردعمل کو فرقہ وارانہ جذبات بھڑکانے کیلئے استعمال کریں۔ انہوں نے تمام مسلمانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ فی الحال دستخطی مہم پر اکتفاء کریں۔

TOPPOPULARRECENT