Sunday , September 24 2017
Home / سیاسیات / مسلمہ قومی سیاسی جماعتوں میں 177 کرو ڑ روپئے کی تقسیم

مسلمہ قومی سیاسی جماعتوں میں 177 کرو ڑ روپئے کی تقسیم

حکمراں بی جے پی کو سب سے زیادہ فنڈ حاصل، عطیات پر سی پی ایم کی رازداری
نئی دہلی۔ 25 ۔ اپریل (سیاست ڈاٹ کام) مالیاتی سال 2014-15 ء کے دوران 1-6 انتخابی ٹرسٹوں نے 19 سیاسی جماعتوں میں 177.40 کروڑ روپئے تقسیم کئے ہیں جس میں بی جے پی کا سب سے زیادہ عطیہ 111.35 کروڑ روپئے کا ہے ۔ اسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک ریفارمس (جمہوری اصلاحات) کے ایک گروپ نے اپنی تازہ رپورٹ میں یہ انکشاف کیا کہ الیکٹورل ٹرسٹس نے کارپوریٹس اور انفرادی طور پر جملہ رقم 177.55 کروڑ روپئے حاصل کئے اور مختلف سیاسی جماعتوں میں 177.40 کروڑ (99.92 فیصد) تقسیم کئے۔ قومی جماعتوں بی جے پی ، کانگریس ، این سی پی اور سی پی ایم نے مالیاتی سال 2014-15 ء کے دوران 6 انتخابی ٹرسٹوں سے بھاری عطیات حاصل کئے ہیں جس میں حکمراں بی جے پی 111.35 کروڑ روپئے کے ساتھ سرفہرست ہے اور اپوزیشن کانگریس کو 31.65 کروڑ روپئے پر اکتفا کرنا پڑا ۔ اگرچیکہ سی پی ایم نے 2.35 لاکھ روپئے ترومپ الیکٹورل ٹرسٹ سے حاصل کئے ہیں۔ الیکشن کمیشن آف انڈیا کو پیش کردہ رپورٹ میں یہ انکشاف نہیں کیا گیا۔ حکومت کے وضع کردہ قواعد کے مطابق الیکٹورل ٹرسٹس کیلئے مالیاتی سال کے دوران اپنی کل آمدنی میں سے 95 فیصد مسلمہ سیاسی جماعتوں میں تقسیم ضروری ہوتی ہے۔ الیکٹورل ٹرسٹی کا بنیادی مقصد سیاسی جماعتوں میں شفاف طریقہ سے فنڈس کی تقسیم  ہے۔ ستیہ الیکٹورل ٹرسٹ کی مجموعی اعانت 141.78 کروڑ پروگریسیو الیکٹورل ٹرسٹ 25.14 کروڑ جن پرگتی الیکٹورل ٹرسٹ 4.02 کروڑ بجاج الیکٹورل ٹرسٹ 3.05 کروڑ ترومپ الیکٹورل ٹرسٹ 3.028 کروڑ اور سماج الیکٹورل ٹرسٹ 0.525 کروڑ روپئے شامل ہیں۔ علاوہ ازیں 6 الیکٹورل ٹرسٹس نے 15 مسلمہ علاقائی جماعتوں بشمول بی جے ڈی ، آئی این ایل ڈی اور عاپ کو جملہ 27.28 کروڑ کی مالی امداد فراہم کی ہے۔ ستیہ الیکٹورل نے انڈین نیشنل لوک دل کو 5 کروڑ کا عطیہ دیا ہے لیکن پارٹی نے الیکشن کمیشن کو پیش کردہ ما لیاتی سال 2014-15 کی رپورٹ میں اس کا تذکرہ نہیں کیا۔ انڈیا بلس ہاوزنگ فینانس نے اعظم ترین عطیہ 40 کروڑ روپئے اور DLF نے 25.01 کروڑ روپئے ستیہ الیکٹورل ٹرسٹ کو فراہم کئے ہیں۔ ٹاٹا اسٹیل نے اعظم ترین عطیہ 14.134 کروڑ روپئے پروگریسیو الیکٹورل ٹرسٹ کو پیش کئے ہیں جبکہ ٹاٹاکے فرزندوں کا حصہ 4.74 کروڑ روپئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT