Friday , July 28 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم اقلیتی طلبہ سے متعلق شرائط میں تبدیلی سے اتفاق

مسلم اقلیتی طلبہ سے متعلق شرائط میں تبدیلی سے اتفاق

اقلیت کا سرٹیفیکٹ تحصیلدار سے حاصل کرنے کا سابق طریقہ برقرار
حیدرآباد ۔ 11۔ جولائی (سیاست نیوز) میڈیسن اور ڈینٹل کورسس میں مسلم اقلیتی طلبہ کیلئے ناقابل عمل شرائط کے لزوم سے متعلق روزنامہ سیاست میں خبر کی اشاعت کے ساتھ ہی محکمہ اقلیتی بہبود حرکت میں آگیا اور چیف سکریٹری سے کالوجی نارائن راؤ یونیورسٹی اینڈ ہیلتھ سائنسیس کے اعلامیہ کے بارے میں شکایت کی گئی۔ چیف سکریٹری ایس پی سنگھ نے بتایا جاتا ہے کہ یونیورسٹی کی جانب سے اعلامیہ میں مسلم اقلیتی طلبہ سے متعلق شرائط میں تبدیلی سے اتفاق کرلیا اور اس سلسلہ میں جلد ہی احکامات جاری کئے جائیں گے۔ یونیورسٹی نے مسلم اقلیتی طلبہ کیلئے اقلیت کا سرٹیفکٹ محکمہ اقلیتی بہبود سے حاصل کرنے کی شرط رکھی ہے جبکہ محکمہ کی جانب سے اس طرح کے سرٹیفکٹ کی اجرائی کا کوئی نظم نہیں ہے ۔ عام طور پر کاسٹ سرٹیفکٹ تحصیلدار کی جانب سے جاری کئے جاتے ہیں لیکن ہیلتھ یونیورسٹی نے ایس سی ایس ٹی بی سی طلبہ کیلئے تحصیلدار کے سرٹیفکٹ کو قابل قبول قرار دیا جبکہ مسلم اقلیتی طلبہ کو محکمہ اقلیتی بہبود سے سرٹیفکٹ پیش کرنے کی ہدایت دی گئی ۔ طلبہ اور اولیائے طلبہ کی بے چینی اور داخلوں سے محرومی کے امکانات کے بارے میں روزنامہ سیاست نے خبر شائع کی اور حکام کو بیدار کیا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے آج اس سلسلہ میں چیف سکریٹری سے ملاقات کی اور انہیں تفصیلات سے واقف کرایا۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ اقلیتی بہبود نے کبھی بھی کاسٹ سرٹیفکٹ جاری نہیں کیا ہے اور نہ ہی حکومت کی جانب سے محکمہ کو اس طرح کا اختیار دیا گیا۔ میڈیسن اور ڈینٹل کورسس کی کونسلنگ میں اگر اقلیتی طلبہ سے محکمہ اقلیتی بہبود کا سرٹیفکٹ پیش کرنے کیلئے اصرار کیا جائے تو وہ داخلوں سے محروم ہوسکتے ہیں۔ عمر جلیل نے چیف سکریٹری سے خواہش کی کہ دیگر طبقات کی طرح مسلم اقلیت کیلئے بھی ہمیشہ کی طرح تحصیلدار کے سرٹیفکٹ کو قبول کیا جائے۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف سکریٹری نے اس سلسلہ میں فائل پر دسخط کردیئے ہیں اور جلد ہی احکامات کی اجرائی عمل میں آئے گی۔ کونسلنگ کے موقع پر تحصیلدار کے سرٹیفکٹ کو قبول کرنے کیلئے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسیس کو ہدایت دی جائے گی ۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے رجسٹرار ہیلتھ یونیورسٹی سے ربط قائم کرتے ہوئے اقلیتی طلبہ کو سرٹیفکٹ پیش کرنے کیلئے مہلت دینے کی خواہش کی ہے۔ یونیورسٹی نے آن لائین درخواستوں کے ادخال کی آخری تاریخ 18 جولائی مقرر کی ہے۔ سکریٹری نے موجودہ تنازعہ کے پس منظر میں مسلم اقلیتی طلبہ کو 18 جولائی کے بعد بھی آن لائین درخواستیں داخل کرنے کی اجازت دینے کی خواہش کی تاکہ اقلیتی طلبہ تحصیلدار سے اقلیت کا سرٹیفکٹ حاصل کرسکیں۔ حکومت کے احکامات کی اجرائی کے بعد مسلم اقلیت کے امیدواروں کو کونسلنگ میں کوئی دشواری نہیں ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT